The news is by your side.

Advertisement

شناختی کارڈ کی ازسرِ نو تصدیق کا عمل آج سے شروع ہو رہا ہے

اسلام آباد: نادار کی جانب سے ساڑھے دس کروڑ رجسٹرڈ عوام کے شناختی کارڈ کی دوبارہ تصدیق کا عمل پہلے سے وضع کردہ نظام کے تحت آج سے شروع کیا جارہا ہے۔

تفصیلات کے مطابق نادرا کی جانب سے ملک بھر میں شناختی کارڈز کی دوبارہ سے تصدیق کا عمل یکم جولائی سے شروع کرنے کا فیصلہ کیا گیا تھا جس کے لیے نادارا نے تڈیقی عمل کا نظام وضع کیا تھا جس کی سربراہی بلوچستان کے دی جی نادرا میجر جنرل ریٹائرڈ ازاجمل خان درانی کر رہے ہیں۔

مزید جانیے: شناختی کارڈ کی ازسرنو تصدیقی عمل کے سربراہ کون ہوں گے؟

شناختی کارڈ کی ازسرِ نو تصدیق کے لیے عوام الناس کو سہولت دینے کے لیےکے لیے شناختی کارڈ کی فیس میں  نمایاں کمی بھی کی گئی ہے جس کے تحت اسمارٹ کارڈ کی فیس 1500 کے بجائے 400 روپے ہو گی جب کہ ارجنٹ فیس 800 روپے مقرر کی گئی ہے۔

اسی سے متعلق: شناختی کارڈز کی تصدیق کےنظام کی منظوری

تصدیقی عمل کو سہل بنانے کے لیے نادرا نے شہریوں کو درخواست کی ہے کہ وہ اپنے موبائل نمبر سے  8008 پر اپنا شناختی کارڈ نمبر ارسال کریں جس کے بعد نادرا کی جانب سے جواب میں اُن کے اہل خانہ کی تفصیلات ارسال کی جائیں گی۔

نادرا کی جانب سے ارسال کی گئی ریکارڈ میں کوئی غیر متعلقہ شخص موجود ہے تو متعلقہ خاندان میں کوئی غیر شخص شامل ہے تو 8008سے پیغام کے جواب میں 1 لکھنے کی ہدایت کی گئی ہے جس کے بعد گھر کا سربراہ نادرا برانچ جا کر اپنے خاندان کی فہرست درست کروا سکے گا۔

واضح رہے افغان طالبان امیر ملا منصوراختر گزشتہ ماہ امریکی  ڈرون حملے میں پاکستان کے علاقے نوشکی میں ہلاک ہوگیا تھا جس کے بعد تحقیقات سے پتہ چلا تھا کہ ملا منصور پاکستانی شناختی کارڈ پرجعلی نام سے کراچی میں رہائش پذیر تھا اوروہ جعلی پاکستانی پاسپورٹ پر کئی بار بیرون ملک سفر بھی کر چکا تھا جس کے بعد وفاقی وزیر داخلہ چوہدری نثار کی جانب سے شناختی کارڈ کی ازسرنو تصدیق کا فیصلہ کیا گیا تھا۔

مکمل تفصیلات کے لیے پڑھیے: شناختی کارڈ کا تصدیقی عمل

شناختی کارڈ کی دوبارہ تصدیقی عمل کیے لیے عوام کو آگاہی دینے کے لیے میڈیا مہم چلائی جائے گی جس کے لیے 13 کروڑ روپے مختص کیے گئے ہیں۔

 

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں