The news is by your side.

Advertisement

وزراء کو تبدیل کرنے کیلئے کوئی فیصلہ نہیں کیا گیا، نعیم الحق

اسلام آباد : وزیر اعظم عمران خان کے معاون خصوصی نعیم الحق نے کہا ہے کہ وزراء کو تبدیل کرنے کیلئے کسی قسم کا کوئی فیصلہ نہیں کیا گیا، فواد چوہدری سے میری کوئی لڑائی نہیں۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے اسلام آباد میں صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کیا، معاون خصوصی وزیراعظم کا کہنا تھا کہ پاکستان ٹیلی ویژن کو بہتر طور پر چلانے کیلئے معاملات پر بات ہورہی ہے جس کے بعد اہم اقدامات کیے جائیں گے۔

وزیر اعظم عمران خان نے وزراء کو تبدیل کرنے سے متعلق کسی قسم کا کوئی فیصلہ نہیں کیا، فواد چوہدری سے میری کوئی لڑائی نہیں ہے، ہم اچھے دوست ہیں۔

ایک سوال کے جواب میں نعیم الحق نے کہا کہ قومی احتساب بیورو کے قوانین میں بہتری لانے کی اشد ضرورت ہے، نیب کی بہت سی کارروائیاں قانون کے مطابق نہیں ہیں، انہوں نے تجویز پیش کی کہ نیب کے پراسیکیوٹرز وزارت قانون سے مشاورت کے بعد مقرر کیے جائیں۔

مزید پڑھیں: قائمہ کمیٹی نے ایم ڈی پی ٹی وی کی فوری بر طرفی کا مطالبہ کر دیا

دریں اثنا گزشتہ دنوں پی ٹی وی ملازمین نے بھی ایم ڈی کو فوری طور پر عہدے سے بر طرف کرنے کا مطالبہ کیاتھا، ملازمین نے اس سلسلے میں پیمرا آفس کے باہر احتجاجی مظاہرہ کیا، جس میں مظاہرین نے کہا کہ ایم ڈی پی ٹی وی کو عہدے سے فوری ہٹایا جائے۔

واضح رہے کہ گزشتہ دنوں وزیر اطلاعات فواد چوہدری اور وزیر اعظم کے معاون خصوصی نعیم الحق کے درمیان ایم ڈی پی ٹی وی سے متعلق اختلافات بڑھ گئے تھے، نعیم الحق اور ایم ڈی پی ٹی وی ارشد خان نے اس سلسلے میں وزیرِ اعظم سے ملاقات بھی کی تھی۔

اپنے مستعفیٰ ہونے کی خبروں پر رد عمل دیتے ہوئے وفاقی وزیر اطلاعات کا کہنا تھا کہ میں نے کوئی استعفیٰ وزیراعظم آفس نہیں بھیجا، ٹیم بنانا صرف وزیراعظم کا کام ہے وہ جسے بہتر سمجھیں گے ٹیم میں رکھنے یا نہ رکھنے کا فیصلہ کریں گے۔

فواد چوہدری کا کہنا تھا کہ پی ٹی وی کے منیجنگ ڈائریکٹر کے حوالے سے مجھے تحفظات ہیں لیکن حتمی فیصلہ عمران خان کا ہوگا، وزیراعظم سے میرا صرف سیاسی نہیں بلکہ ایک ذاتی تعلق بھی ہے اس لیے اگر وہ فون اٹھا کر بولیں گے تو وزارت ہی چھوڑ دوں گا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں