The news is by your side.

Advertisement

ناگالینڈ علیحدگی پسند تنظیم نے کشمیر کی خصوصی حیثیت ختم کرنے کو مسترد کر دیا

ناگالینڈ: بھارت کی شمال مشرقی ریاست کی علیحدگی پسند تنظیم نے بھی کشمیر کی خصوصی حیثیت ختم کرنے کے بھارتی اقدام کو مسترد کر دیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق ناگالینڈ کی علیحدگی پسند تنظیم کے رہنما ازاک موویہ نے غیر ملکی میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے مقبوضہ کشمیر کے سلسلے میں بھارتی اقدام کو مسترد کر دیا۔

ازاک موویہ نے کہا کہ آرٹیکل 370 کا خاتمہ کشمیر کی حیثیت کے خلاف کیا گیا ہے، آرٹیکل کے خاتمے کو ہم مسترد کرتے ہیں۔

علیحدگی پسند تنظیم کے رہنما نے کہا مودی حکومت کا یہ اقدام کشمیری قوم کے ساتھ دھوکا ہے، ناگالینڈ کو بھی بھارتی آئین کے تحت خصوصی حیثیت حاصل ہے، خدشہ ہے بھارتی حکومت کا اگلا قدم ناگالینڈ ہوگا۔

تازہ ترین:  مقبوضہ کشمیر میں کرفیو کا 63 واں روز

نیشنل سوشلسٹ کونسل آف ناگالم شمال مشرقی انڈیا کی سب سے بڑی باغی علیحدگی پسند تنظیم ہے، جس کے ارکان گزشتہ چار عشروں سے آزادی کے لیے لڑ رہے ہیں۔

واضح رہے کہ مقبوضہ کشمیر کی خود مختار حیثیت ختم کرنے پر ناگالینڈ کے حریت پسندوں نے اعلان آزادی کر دیا تھا، الگ دارالحکومت بنا کر قومی پرچم اور ترانہ بھی جاری کر دیا تھا۔

ناگالینڈ حکومت کا کہنا تھا کہ ناگالینڈ اب ایک آزاد ملک ہے جس پر بھارت نے زبردستی قبضہ کر رکھا تھا اور ناگالینڈ نے کبھی بھی بھارت کے ساتھ الحاق نہیں چاہا تھا۔

خیال رہے کہ بھارت نے 1947 میں ناگالینڈ پر زبردستی قبضہ جما لیا تھا، تب سے اب تک آزادی اور حقوق کی جدوجہد کے دوران بھارتی فوجی ناگا لینڈ کے ہزاروں لوگوں کو قتل کر چکے ہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں