احتجاج کا خوف : نریندر مودی کی آمد پر مقبوضہ کشمیر فوجی چھاؤنی میں تبدیل -
The news is by your side.

Advertisement

احتجاج کا خوف : نریندر مودی کی آمد پر مقبوضہ کشمیر فوجی چھاؤنی میں تبدیل

بھارتی وزیراعظم کی آمد پر مقبوضہ کشمیر فوجی چھاؤنی میں تبدیل ہوگیا، بھارتی فوج نے پوری وادی میں کرفیو نافذ کردیا، موبائل اور انٹر نیٹ سروس معطل ہے۔ حریت رہنما گھروں میں نظر بند کر دئیے گئے۔

تفصیلات کے مطابق بھارتی وزیر اعظم نریندرا مودی کی کشمیر آمد پر سخت حفاظتی انتطامات کیے گئے تھے، اس موقع پر بھارتی فورسز نے مقبوضہ وادی کو جیل میں تبدیل کردیا۔ گلی گلی کڑے پہرے لگا دیئے گئے۔

سری نگر اور بارہ مولا سمیت کئی علاقوں میں لوگوں کو گھروں میں محصور کیے رکھا ، لوگوں کی موٹرسائیکلیں ضبط کرلیں اور انہیں اسپتال تک بھی نہیں جانے دیا گیا، اس کے علاوہ موبائل اور انٹرنیٹ سروس بھی معطل رہی۔

واضح رہے کہ نریندرا مودی کی آمد پر مقبوضہ کشمیر میں شٹر ڈاؤن ہڑتال کی کال دی گئی تھی، بھارتی فوج نے احتجاج کے ڈر سے حریت رہنماؤں کو گھروں میں نظربند کرکے دنیا کی آنکھوں پر پٹی باندھنے کی کوشش کی۔

مزید پڑھیں: نریندرمودی کے دورے پرمقبوضہ کشمیرمفلوج کر دیا گیا ہے‘ مشعال ملک

دوسری جانب پاکستانی وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی عالمی کانفرنس میں شرکت کے لیے لندن پہنچے جہاں وہ مقبوضہ کشمیر میں ہوتے مظالم کو دنیا کے سامنے رکھیں گے۔

مزید پڑھیں: بھارت مقبوضہ کشمیر میں ظلم کررہا ہے، عالمی دنیا خاموش ہے، شاہ محمود قریشی

شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کشمیر ہماری خارجہ پالیسی کا اہم ستون ہے، کشمیریوں پر بھارتی مظالم کے خلاف بھرپور آواز اٹھائیں گے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں