The news is by your side.

Advertisement

والد نشوہ کا کل شام تک مطالبات پورے نہ ہونے پر احتجاج کا اعلان

کراچی : دارالصحت اسپتال کی مجرمانہ غفلت سے جاں بحق نشوہ کے والد نے کل شام تک مطالبات منظور نہ ہونے پراحتجاج کااعلان کرتے ہوئے کہا اسپتال کے مالکان کوگرفتار کرکے انکوائری کمیشن بنایا جائے۔

تفصیلات کے مطابق نشوہ کے والد قیصر علی نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا نشوہ کے درد کو سمجھنے اور آواز اٹھانے پر میڈیا کا شکرگزار ہوں، ہم نےاحتجاج کی کال دی تھی۔

قیصرعلی کا کہنا تھا ہماری وزیر اعلیٰ سندھ سے3شرطیں تھیں، پہلی شرط اسپتال کوسیل کرنے، دوسری شرط مالکان کو گرفتارکیاجائے اور تیسری شرط تھی کہ انکوائری کمیشن بنایا جائے۔

نشوہ کے والد نے کہا پہلاوعدہ پوراہوااوراسپتال کوسیل کردیاتھا ، وزیر اعلیٰ سندھ نےوعدہ پوراکیااور اسپتال کو سیل کیا، ہمارے باقی 2 بنیادی وعدے جو اب تک پورے نہیں ہوئے۔

ان کا کہنا تھا اسپتال مالک کیخلاف غفلت کامقدمہ درج کرارکھاہے، ہم نےکل کورٹ میں اپیل کی یہ 302 کا مقدمہ ہے اور مطالبہ کیا اسپتال کو سیل اورگورنمنٹ کی تحویل میں لیاجائے۔

قیصرعلی نے کہا کل شام تک مطالبات پورےنہ ہوئےتواتوارکواحتجاج کریں گے ، کسی سیاسی جماعت کا دباؤ نہیں ،اسے سیاسی رنگ نہ دیا جائے۔

مزید پڑھیں  :  مطالبات نہ مانے تو شہریوں کے ساتھ دھرنا دوں گا، والد نشوہ

گذشتہ روز بھی نشوہ کے والد قیصر علی اے آر وائی کے پروگرام باخبرسویرامیں گفتگوکرتے ہوئے کہا تھا ہمارامطالبہ ہےدوران تفتیش دارلصحت اسپتال بندکر دیا جائے، تفتیش کے بعد طے کیا جائے کہ اسپتال کوکتنی مدت کا لائسنس دیا جائے۔

نشوہ کے والد نے مطالبہ کیا تھا معاملےکی عدالتی تحقیقات کی جائے، انتظامیہ کوگرفتارکیاجائے اور تفتیش تک اسپتال بندکیا جائے، اپنے مطالبات کے لیےکل سے میں شہریوں سمیت بیٹھ جاؤں گا۔

واضح رہے گذشتہ ہفتے  نوماہ کی نشوہ کودارالصحت اسپتال میں غلط انجکشن لگایا گیا تھا، طبیعت بگڑنےپرنشوہ کولیاقت نیشنل اسپتال منتقل کیا گیا اور کئی روز زندگی اورموت کی جنگ لڑنے والی نشوہ  خالق حقیقی سے جاملی ، وہ لیاقت نیشنل اسپتال کے آئی سی یو میں ایک ہفتےتک زیرعلاج رہی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں