The news is by your side.

Advertisement

موحودہ پارلیمنٹ نے اپنی اکتیس سالہ تاریخ میں سب سے زیادہ قوانین پاس کیے، اسپیکر ایاز صادق

اسلام آباد: قومی اسمبلی کے اسپیکر ایاز صادق کا کہنا ہے کہ موجودہ پارلیمنٹ نے اب تک سب سے زیادہ قوانین پاس کیے ہیں، جن کی تعداد 187 ہے۔

ان خیالات کا اظہار انھوں نے قومی اسمبلی کے الوداعی اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کیا، ان کا کہنا تھا کہ پانچ سال میں ایوان کے بہترین چلائے جانے پر وہ اللہ کے شکرگزار ہیں۔

انھوں نے تمام سیاسی جماعتوں کی طرف سے تعاون پر شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ آج اس ایوان کا آخری دن ہے، آج کسی کے خلاف کوئی بات نہ کرے، جتنی بھی تلخ باتیں ہیں انھیں الیکشن مہم کے لیے رکھ چھوڑیں۔

اسپیکر ایاز صادق نے گزشتہ ادوار میں پاس ہونے والے قوانین کے سلسلے میں بات کرتے ہوئے کہا کہ پارلیمنٹ نے 1987 سے 1990 تک 13 قوانین پاس کیے جب کہ 1990 سے 1993 تک 60 قوانین پاس کیے گئے۔

انھوں نے قومی اسمبلی کے آخری اجلاس میں بتایا کہ 1993 سے 1996 تک 54 قوانین پاس کیے گئے جب کہ 1997 سے 1999 تک 51 قوانین پاس کیے گئے۔

قومی اسمبلی کے اسپیکر کا کہنا تھا کہ 2002 سے 2007 تک اسمبلی نے 38 قوانین پاس کیے جب کہ اگلا ٹرم پہلا تھا جب اسمبلی نے پانچ سال پورے کیے اور 2008 سے 2013 تک اس نے 93 قوانین پاس کیے۔

اسپیکر ایاز صادق نے کہا کہ موجودہ پارلیمنٹ نے اب تک 187 قوانین پاس کیے، 5 آئینی ترامیم بھی منظور کی گئیں اور 21 نجی ممبران کے بل پاس کیے گئے۔

سندھ اورخیبرپختونخواہ کی اسمبلیاں مدت پوری ہونےکے بعد تحلیل


قومی اسمبلی کے اسپیکر نے مثبت رپورٹنگ کرنے پر میڈیا کا بھی شکریہ ادا کیا، انھوں نے پی ٹی آئی کی رہنما شیریں مزاری کے حوالے سے سب کو مبارک باد دیتے ہوئے کہا کہ وہ الیکشن میں حصہ لے رہی ہیں تاہم انھوں نے اس بات کی تردید کردی۔

شیریں مزاری نے کہا کہ ہم نے کئی چیزیں پارلیمنٹ سے سیکھیں، حکومتی ارکان کے نامناسب کمنٹس بھی آئے جس کا معاملہ اللہ پر چھوڑ دیا ہے، بجٹ تقریر میں احسن اقبال کا روٹیاں اٹھاکر احتجاج کرنا بھی مناسب نہیں تھا، بہرحال خورشید شاہ نے ہماری شکایات کی اچھی ترجمانی کی۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں۔ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں