The news is by your side.

Advertisement

قومی اسمبلی اجلاس: ایل او سی پر بھارتی جارحیت کے خلاف قرارداد منظور

اسلام آباد: قومی اسمبلی نے بھمبھر سیکٹر میں بھارتی جارحیت کی مذمت کرتے ہوئے 7 جوانوں کی شہادت کو خراج عقیدت پیش کرنے کی قرارداد منظور کرلی۔

قومی اسمبلی کا اجلاس اسپیکر ایاز صادق کی زیر صدارت ہوا۔ اجلاس میں حاجی عدیل، جہانگیر بدر اور نوید قمر کے والد سمیت گڈانی واقعہ میں جاں بحق افراد اور پاک فوج کے شہدا کے لیے فاتحہ خوانی کی گئی۔

اجلاس میں ایل او سی پر بھارتی جارحیت کے خلاف متفقہ مذمتی قرارداد منظور کی گئی۔ قرارداد میں کہا گیا کہ ایوان جوانوں کی شہادت کے واقعے کی شدید مذمت کرتا ہے۔ ایوان ایل او سی شہدا کے لواحقین کے غم میں برابر کا شریک ہے۔

مذمتی قرارداد وفاقی وزیر امور کشمیر برجیس طاہر نے ایوان میں پیش کی

اجلاس میں سیالکوٹ میں خواجہ سرا پر تشدد کا واقعہ بھی زیر بحث رہا۔ واقعہ پر محمود خان اچکزئی نے اظہار افسوس کرتے ہوئے کہا کہ سیالکوٹ میں با اثر افراد نے ایک معصوم مخلوق کو نشانہ بنایا۔ ان پر طاقت کا استعمال کیا گیا جو نہ مردوں میں شمار ہوتے ہیں نہ خواتین میں۔

اجلاس میں وزارت خارجہ نے گزشتہ 4 سال میں بیرونی ممالک میں مشنز پر ہونے والے اخراجات کی تفصیلات ایوان میں پیش کر دیں۔

وزیر خزانہ اسحاق ڈار نے کمپنیز آرڈیننس 2016 پیش کیا۔ وزیر خزانہ کا کہنا تھا کہ کمپنیز آرڈیننس کی منظوری سے آف شور کمپنیوں سے متعلق بھی معلومات حاصل کی جا سکیں گی۔

گڈانی شپ بریکنگ یارڈ حادثے پر پیپلز پارٹی کے توجہ دلاؤ نوٹس پر وفاقی وزیر حاصل بزنجو نے کہا کہ گڈانی حادثے میں جاں بحق ہونے والوں کی تعداد 28 ہوچکی ہے۔ ملکی تاریخ میں ایسے واقعہ میں یہ سب سے زیادہ ہلاکتیں ہیں۔ حاصل بزنجو نے کہا کہ بلوچستان حکومت نے جاں بحق افراد کے لواحقین کے لیے 15 لاکھ فی کس، زخمیوں کے لیے 1 لاکھ معاوضے کا اعلان کیا ہے۔

قومی اسمبلی کا اجلاس پیر کی سہ پہر شار بجے تک ملتوی کردیا گیا۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں