The news is by your side.

Advertisement

قومی سلامتی کمیٹی اجلاس: بھارت کی جارحیت کا منہ توڑ جواب دینے کا فیصلہ

اسلام آباد: قومی سلامتی کمیٹی کے اجلاس میں فیصلہ کیا گیا ہے کہ پاکستان بھارت کی طرف سے کسی بھی جارحیت کا منہ توڑ جواب دے گا۔

تفصیلات کے مطابق آج وزیر اعظم عمران خان کی زیر صدارت قومی سلامتی کمیٹی کا اجلاس منعقد ہوا، اجلاس کے بعد اعلامیہ جاری کیا گیا جس میں کہا گیا ہے کہ کسی بھی بھارتی جارحیت کا بھرپور جواب دیا جائے گا۔

اجلاس میں تینوں مسلح افواج کے سربراہان شریک ہوئے، چیئرمین جوائنٹ چیفس آف اسٹاف کمیٹی نے بھی شرکت کی، ڈی جی آئی ایس پی آر، ڈی جی آئی ایس آئی، وزیر دفاع، وزیر خارجہ اور وزیر داخلہ بھی اجلاس میں شریک تھے۔

اجلاس میں بھارتی جارحیت، مقبوضہ کشمیر میں سنگین صورت حال کا جائزہ لیا گیا، قومی سلامتی کمیٹی نے بھارتی جارحیت کی شدید مذمت کی، اجلاس کے اعلامیے میں کہا گیا ہے کہ پاکستان کشمیریوں کو کبھی تنہا نہیں چھوڑے گا۔

یہ بھی پڑھیں:  او آئی سی کشمیر میں گھمبیر صورت حال کا فوری طور نوٹس لے: شاہ محمود

قومی سلامتی کمیٹی نے کہا کہ بھارت کشمیر میں ہر طرح کا اخلاقی اختیار کھو چکا ہے، کشمیر میں فوج کی غیر معمولی نقل و حرکت جلتی پر تیل کا کام کرے گی، پاکستان افغان امن عمل کے لیے بھرپور کوششیں کر رہا ہے، ایسے وقت میں بھارتی جارحیت قابل افسوس ہے۔

اجلاس سے خطاب میں وزیر اعظم عمران خان نے کہا کہ پاکستان کشمیریوں کے ساتھ ہمیشہ کھڑا رہے گا، بھارتی ہٹ دھرمی سے خطے کا امن سبوتاژ ہو رہا ہے۔

انھوں نے کہا کہ بھارت عالمی قوانین کی مسلسل خلاف ورزی کر رہا ہے، عالمی رہنماؤں کی توجہ بھارتی مظالم کی طرف دلانا ہوگی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں