marri کوئٹہ: نوابزادہ گزین مری رہائی کے فوری بعد دوبارہ گرفتار rearrest
The news is by your side.

Advertisement

کوئٹہ: نوابزادہ گزین مری رہائی کے فوری بعد دوبارہ گرفتار

کوئٹہ : سابق وزیر داخلہ بلوچستان نوابزادہ گزین مری کو بلوچستان ہائیکورٹ کے حکم پر رہائی ملنے کے فوری بعد احاطہ جیل سے ایک اور مقدمہ میں گرفتار کرلیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق بلوچ قوم پرست رہنما گزین مری کو بلوچستان ہائیکورٹ کے حکم کے تحت ڈسٹرکٹ جیل کوئٹہ سے رہا تو کیا گیا تاہم پولیس نے ایک او مقدمہ میں انہیں جیل کے احاطے سے ہی دوبارہ دھر لیا۔

گزین مری کی رہائی سے قبل ہی کوئٹہ پولیس کے اعلیٰ افسران بھاری نفری کے ہمراہ ڈسٹرکٹ جیل پہنچ گئے تھے ،پولیس حکام کا کہنا ہے کہ گزین مری کو کوئٹہ کے انڈسٹریل تھانے میں دوہزار پندرہ کے دوران درج ہونے والے ایک مقدمے کی تحقیقات کے لئے دوبارہ حراست میں لیا گیا ہے۔

سابق صوبائی وزیرداخلہ کی گرفتاری کے موقع پر پولیس نے جیل روڈ کو عام ٹریفک کے لئے بند کردیا اور دو گھنٹے تک دونوں اطرا ف بدترین ٹریفک جا م رہا۔

معروف بلوچ قوم پرست رہنما اور سابق وزیر داخلہ بلوچستان نوابزادہ گزین مری انتیس ستمبر کو تھری ایم پی او کے تحت اس وقت گرفتار ہوئے تھے جب انہیں کوہلو راکٹ باری کیس میں کوئٹہ کی عدالت نے ضمانت پر رہا کیا تھا۔

تھری ایم پی او کے تحت ان کی گرفتاری ایک ماہ کے لئے تھی تاہم ان کے وکیل نے اس سلسلے میں بلوچستان ہائیکورٹ سے رجوع کرلیا تھا، عدالت عالیہ بلوچستان نے تھری ایم پی او کے تحت گرفتاری کو غیر قانونی قراردیتے ہوئے گزین مری کو رہا کرنے کا حکم دیا تھا۔


مزید پڑھیں: بلوچستان ہائیکورٹ کا نوابزادہ گزین مری کو رہا کرنے کا حکم


واضح رہے کہ بلوچ قوم پرست رہنما گزین مری پر مختلف مقدمات عدالتوں میں زیر سماعت ہیں جن میں ان کی ضمانت لی جاچکی ہے۔

بلوچستان میں مری قبیلے کے رہنما نوابزادہ گزین مری کو نوازمری قتل کیس میں 22ستمبر کو ایئرپورٹ سے اس وقت گرفتار کیا گیا تھا، جب وہ 18سالہ خودساختہ جلاوطنی ختم کرکے وطن پہنچے تھے۔

گزشتہ سماعت میں نواب زادہ گزین مری کو ایم پی او کے تحت گرفتار کرکے ایک ماہ کے لیے جیل بھیج دیا گیا تھا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں