The news is by your side.

Advertisement

نواز شریف کے غلط مشورے نے داماد کیپٹن (ر) صفدر سمیت دیگر رہنماؤں کو پھنسوا دیا

اسلام آباد : ایون فیلڈ ریفرنس کے سزا یافتہ مجرم نوازشریف نے اپنے مجرم داماد کو قانون کے مطابق گرفتاری دینے کا مشورہ دینے کے بجائے قانون سے کھلواڑ کا غلط مشورہ دے کر داماد سمیت دیگر کارکنان کو بھی پھنسوا دیا۔

تفصیلات کے مطابق ایوان فیلڈ ریفرنس کے سزا یافتہ مجرم داماد محمد صفدر نے لندن میں موجود سُسرنوازشریف سے پوچھا کہ گرفتاری کیسے دینی ہے ؟ جس پر نوازشریف نے شکیل اعوان اور حنیف عباسی کو محمد صفدر کو چھپانے کا حکم دیا۔

نوازشریف کا ہی مشورہ تھا کہ مجرم محمد صفدر کی قیادت میں ریلی نکالی جائے اور نیب گرفتار کرنے کی کوشش کرے تو کارکنان اس میں رکاوٹ ڈالیں، مگر  سسر کا کوئی مشورہ کام نہ آیا۔

کارکنان کے درمیان ہی نیب کی ٹیم نے کیپٹن ریٹائرڈ صفدر کو حراست میں لیا اور ہیڈ کواٹر منتقل کیا جبکہ آج احتساب عدالت کے حکم پر اڈیالہ جیل بھیج دیا گیا۔

یاد رہے کیپٹن صفدرایون فیلڈریفرنس فیصلےمیں سزا کے بعد دو روز  تک چھپے رہے جبکہ نیب ٹیمیں ایبٹ آباد،مانسہرہ اورہری پورمیں انہیں ڈھونڈنےکےلیےجگہ جگہ چھاپے مارتی رہیں ۔

ذرائع نےبتایاکہ کیپٹن صفدر دوست کےہمراہ غارمیں جاچھپے اور  نیب سے بچنے کےلئے چھپر روڈہری پور میں روپوش رہنےکےبعد چھپتےچھپاتےراول پنڈی پہنچےاور اتوار کو ریلی میں سامنے آئے ۔

کیپٹن صفدرکی روپوشی میں مدد دینے اور راول پنڈی میں غیرقانونی ریلی نکالنے پر حنیف عباسی اور شکیل اعوان سمیت ن لیگ کے50 سے زائد رہنماؤں  اور کارکنوں کے خلاف مقدمہ درج کرلیا گیا ہے۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں۔ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔ 

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں