وزیراعظم اوران کے صاحبزادے کے سعودی اسٹیل مل کے حوالے سے دعوے غلط نکلے -
The news is by your side.

Advertisement

وزیراعظم اوران کے صاحبزادے کے سعودی اسٹیل مل کے حوالے سے دعوے غلط نکلے

اسلام آباد: وزیراعظم نواز شریف اور ان کے صاحبزادے حسین نواز کےدعووں میں تضاد سامنے آگیا، سعودی عرب میں قائم اسٹیل مل فروخت کرکے لندن میں فلیٹس خریدنےکےدعوےغلط نکلے۔ اپارٹمنٹس انیس سو اٹھانوے سے شریف خاندان کےزیراستعمال ہیں۔

پنامہ لیکس کے وزیراعظم نواز شریف کے صاحبزادوں اور صاحبزادی کی آف شور کمپنیوں کے بارے میں انکشافات نے تہلکہ مچادیا ہے، وزیراعظم نواز شریف کو وضاحت کے لئے سرکاری ٹی وی پرآنا پڑا اورتحقیقات کے لئے عدالتی کمیشن بنانے کااعلان بھی کیا لیکن وزارت قانون کا کہناہے کہ انکوائری کمیشن بنے گا۔

وزیراعظم نواز شریف نے وضاحتی خطاب میں بتایا کہ ان کے بیٹوں نے سعودی عرب میں اپنی اسٹیل مل بیچ کر کاروبار کیا۔

دوسری جانب حسین نواز نے اس کے برعکس بیان دیا کہ انہوں نے لندن میں واقع فلیٹس جو کہ انہوں نے دوہزار چھ میں لئے تھے ان پر قرضہ لے کرکاروبارکیا۔

اے آروائی نیوز کے اینکر پرسن اسد کھرل نے نے دعویٰ کیا ہے کہ سعودی عرب میں اسٹیل مل فروخت کرکے ایک بڑی صنعتی ایمپائر خریدی گئی جس کے منیجنگ ڈائریکٹر حسین نواز تھے، اس رقم سے لندن میں فلیٹس خریدنے کا دعویٰ غلط ہے۔

اس سے پہلے لندن میں واقع چار فلیٹس کے بارے میں بھی دعویٰ جھوٹا نکلا۔حسین نواز نے بتایا کہ انہوں نے دوہزار چھ میں فلیٹس خریدے جبکہ صدیق الفاروق کا کہناہے کہ انیس سو چھیانوے میں جب وہ لندن گئے تو انہی فلیٹس میں گئے تھے۔

اس سلسلے میں بی بی سی کی پیپلزپارٹی کے دوسرے دور میں تیار کی گئی دستاویزی رپورٹ کو بھی ثبوت کے طورپردیکھا جاسکتا ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں