The news is by your side.

Advertisement

پہلے عدلیہ کو بحال کیا، اب عدل بحال کریں گے: نواز شریف

لاہور:سابق وزیراعظم نوازشریف نے کہا ہے کہ سازشیوں نے اقامہ کو بنیاد بنا کر مجھے نکالا، اب کوئی ثبوت نہیں مل رہا تو ریفرنس پر ریفرنس بنا رہے ہیں.

ان خیالات کا اظہار انھوں‌ نے لاہور میں ن لیگ کے کارکنوں سے غیر رسمی گفتگو کرتے ہوئے کیا. نواز شریف کا کہنا تھا کہ ان کے خلاف بننے والا ریفرنس اس بات کا ثبوت ہے کہ شازشیوں کے پاس کوئی ثبوت نہیں.

سابق نااہل وزیر اعظم کا کہنا تھا کہ سازشیوں کی سازشیں میرا کچھ نہیں بگاڑ سکتی، لودھراں الیکشن نے بتا دیا ہے کون عوام کاخیر خواہ ہے.

انھوں‌ نے کارکنوں‌ سے کہا کہ ہمارا ماضی گواہ ہے کہ ہم نے عدلیہ کو بحال کیا اور اب عدل بحال کریں گے. عوامی اجتماع میں زیادہ سے زیادہ شریک ہوکرمیرا ساتھ دیں.

سابق وزیر اعظم کا کہنا تھا کہ ن لیگ نے ہمیشہ عوامی منصوبے ،موٹر وے اور کشادہ سڑکیں بنائی، بجلی کا جن بھی انرجی منصوبوں سےبوتل میں قید کیا.

نواز شریف کے خلاف توہین عدالت کی درخواست دائر

سابق وزیر اعظم کا کہنا تھا کہ سی پیک ملک کی تقدیر بدلے گا، اللہ کے فضل سے اگلی بار بھی ن لیگ کو کامیابی ملےگی،لودھراں کے نتائج ثبوت ہیں کہ سازشیوں کی سازشیں کچھ نہیں بگاڑ سکتی. کوئی ثبوت نہیں ملا، تو تو ریفرنس پر ریفرنس بنائے گئے.

انھوں نے کارکنوں کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ نہ تو میں‌ پریشان ہوں، نہ ہی آپ پریشان ہوں، اگلے الیکشن میں‌بھی ہمیں‌ ہی کامیابی ملے گی.

 یاد رہے کہ ن لیگ کی جانب سے عدلیہ کے خلاف لفظی جنگ جاری ہے۔  اسی ضمن میں آج سابق وزیر اعظم نواز شریف کے خلاف توہین عدالت کی درخواست دائر کی گئی۔ درخواست میں نواز شریف، سیکریٹری انفارمیشن اور چیئرمین پیمرا کو فریق بنایا گیا۔

دائر کردہ درخواست کے متن میں کہا گیا ہے کہ نواز شریف نا اہلی کے بعدعدالتوں کے خلاف زہر افشانی کر رہے ہیں۔ نواز شریف کو توہین عدالت میں سزا دی جائے۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں۔ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں