The news is by your side.

Advertisement

ایون فیلڈ ریفرنس میں سزا یافتہ مجرم نواز شریف کے بی کلاس میں مزے

مریم نواز کو بی کلاس دینے پر قیدی خواتین کے اہلِ خانہ کا جیل انتظامیہ کے خلاف عدالتوں میں جانے کا فیصلہ

راولپنڈی: قیدیوں کی جنت سمجھے جانے والے اڈیالہ جیل کی بی کلاس میں ایون فیلڈ ریفرنس میں سزا یافتہ مجرم سابق وزیر اعظم نواز شریف کے مزے آگئے۔

تفصیلات کے مطابق کرپشن کے مجرم نواز شریف کو اڈیالہ جیل میں قید کاٹنے کے لیے الگ کمرہ الاٹ کیا گیا ہے جس میں اکیس انچ ٹی وی لگا ہوا ہے۔

نواز شریف کے کمرے میں باہر کی دنیا سے با خبر رہنے کے لیے اخبار اور ریڈیو بھی میسر ہے، آرام کے لیے پلنگ اور پنکھا بھی لگا ہوا ہے۔

قید کے دوران مجرم نواز شریف کو واک کرنے کی اجازت بھی ملی ہوئی ہے، انھیں خصوصی غذائیں کھلائی جا رہی ہیں جن میں پھل اور قیمہ بھی شامل ہیں۔

ڈی آئی جی جیل خانہ جات کے مطابق کہ پنجاب انسٹی ٹیوٹ آف کارڈیالوجی کے دو ڈاکٹر قیدی نواز شریف کا باقاعدہ چیک اپ کرتے ہیں، جمعرات کو ملاقات کی سہولت بھی حاصل ہے۔

ڈی آئی جی جیل خانہ جات نے غلیظ ٹوائلٹ اور بستر نہ ملنے کی خبریں جھوٹی قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ مجرمہ مریم نواز کو بھی خواتین سیل میں بہتر سہولتیں دی جارہی ہیں۔

پنجاب کے نگراں وزیرِ اطلاعات کا کہنا ہے کہ اڈیالہ جیل صوبائی حکومت کے زیرِ نگرانی آتا ہے، نواز شریف اور مریم نواز کو قانون کے مطابق سہولتیں میسر ہیں۔

اڈیالہ جیل : نوازشریف اورمریم کو بی کلاس اور قیدی نمبرز الاٹ، یونیفارم آج ملے گا

بیرسٹر علی ظفر نے مزید کہا کہ قانون میں گنجائش ہے کہ ٹرائل جیل میں بھی کیا جاسکتا ہے، سیکورٹی تھریٹ کی صورت میں ٹرائل جیل میں کر سکتے ہیں۔ خیال رہے کہ نواز شریف کا ٹرائل اوپن کورٹ میں کیے جانے کا فیصلہ ہو چکا ہے۔

واضح رہے کہ پنجاب کی 43 جیلوں میں بند 881 قیدی خواتین کو سی کلاس بیرکوں میں بند کیا گیا ہے، مریم نواز پہلی خاتون ہیں جنھیں پنجاب کی جیل میں بی کلاس فراہم کی گئی۔

متعدد قیدی خواتین کے اہلِ خانہ نے اس امتیازی سلوک پر جیل انتظامیہ کے خلاف عدالتوں میں جانے کا فیصلہ کر لیا ہے، تاہم جیل انتظامیہ کا کہنا ہے کہ مریم نواز کو قانون کے مطابق بی کلاس دی گئی ہے۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں۔ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں