The news is by your side.

Advertisement

نوازشریف کو ایک ہفتے میں چار بار درد اٹھا، حکومت طبی سہولیات نہیں دے رہی، مریم نواز

لاہور: سابق وزیراعظم کی صاحبزادی مریم نواز نے دعویٰ کیا ہے کہ نوازشریف کو گزشتہ ایک ہفتے کے دوران 4 بار انجائنا کا درد اٹھا مگر حکومت انہیں کوئی طبی امداد فراہم نہیں کررہی۔

تفصیلات کے مطابق مریم نواز نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ پر ٹویٹ کرتے ہوئے بتایا کہ ڈاکٹر کے ساتھ آج کوٹ لکھپت جیل میں نوازشریف سے ملاقات ہوئی جس کے دوران انہوں نے درد کی تکلیف کا بتایا۔

مریم نواز نے دعویٰ کیا کہ دورانِ ملاقات نوازشریف کو انجائنا کا درد اٹھا تو انہیں ڈاکٹر نے فوری دوا فراہم کی، سابق وزیراعظم نے بتایا کہ ایسا درد گزشتہ ہفتے کے دوران 4 بار ہوچکا ہے۔

اپنے ٹویٹ میں مریم نواز نے بتایا کہ نوازشریف نےکہا آئندہ وہ اپنی تکلیف کاذکریاشکایت نہیں کریں گے، تین بار وزیراعظم رہنے والے شخص کے ساتھ حکومت بے حسی کا مظاہرہ کررہی ہے۔

مریم نوازکا کہنا تھا کہ نوازشریف کی طبیعت کے حوالے سے حکومت کوئی اقدامات نہیں کررہی جس پر مجھے اور اہل خانہ کو بہت زیادہ خدشات ہیں۔

خیال رہے 25 فروری کو اسلام آباد ہائی کورٹ نے طبی بنیادوں پرضمانت پررہائی سے متعلق فیصلہ سنایا تھا، فیصلے میں سابق وزیر اعظم نواز شریف کی درخواست ضمانت کو مسترد کرتے ہوئے کہا تھا نوازشریف کوایسی کوئی بیماری لاحق نہیں جس کاعلاج ملک میں نہ ہوسکے۔عدالتی فیصلے کے بعد نوازشریف کو جناح اسپتال سے ایک بار پھر کوٹ لکھپت جیل منتقل کردیا گیا تھا۔

واضح رہے گزشتہ برس 24 دسمبر کو سابق وزیر اعظم نواز شریف کے خلاف العزیزیہ اسٹیل ملز اور فلیگ شپ ریفرنسز کا فیصلہ سنایا گیا تھا، فیصلے میں نواز شریف کو العزیزیہ ریفرنس میں مجرم قرار دیتے ہوئے 7 سال قید کی جرمانے کا حکم سنایا تھا جبکہ فلیگ شپ ریفرنس میں انہیں بری کردیا گیا تھا۔

نوازشریف کو طبی سہولیات فراہم

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں