معیشت کی ذبوں حالی کا سوال نااہل کرنے والوں سے پوچھیں، نواز شریف
The news is by your side.

Advertisement

معیشت کی ذبوں حالی کا سوال نااہل کرنے والوں سے پوچھیں، نواز شریف

سرگودھا : سابق وزیراعظم نوازشریف نے کہا ہے کہ نااہلی کے فیصلے کو عوام نے مسترد کردیا ہے اب ایسا نہیں ہوگا کہ عوام اہل کر کے بھیجیں اور تم نااہل کردو، عوام نے ان سازشیوں کو مسترد کردیا ہے.

ان خیالات کا اظہار انہوں نے کوٹ مومن میں ایک جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے کیا، سابق وزیراعظم کا کہنا تھا کہ عوام  نے نواز شریف کو اہل کر کے اسمبلی میں بھیجا تھا لیکن چند لوگوں نے اسے نااہل قرار دے دیا لیکن اب ایسا نہیں ہوگا.

عدلیہ کو کڑی تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے انہوں نے کہا کہ عوام نے نااہلی کے فیصلے کو قبول نہیں کیا ہے اور آج کوٹ مومن کے اس جم غفیر نے بھی فیصلے کے خلاف اپنا ریفرنڈم دے دیا ہے اور عوام کا فیصلہ ہی ماننا ہوگا.

سابق وزیراعظم نواز شریف نے ایک بار پھر یہ سوال اُٹھایا کہ یہ کیسا مذاق ہے کہ ایک اقامے  پر وزیر اعظم کو نااہل کر دیں اور بیٹے سے تنخواہ نہ لینے پر حکومت سے ہی باہر کردیا جائے، کیا یہ درست فیصلہ تھا؟ جس پر جلسے کے شرکاء نے منفی میں جواب میں دیا.

انہوں نے چیئرمین تحریک انصاف عمران خان پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ عوام نے لاڈلوں کو مسترد کر دیا ہے اور آئندہ الیکشن میں لاڈلے کو منہ چھپانے کی جگہ بھی نہیں ملے گی اور پاکستان کی باشعور عوام آج بھی مسلیم لیگ (ن) کے ساتھ کھڑی ہے.

سربراہ مسلم لیگ نواز شریف نے عدالتی فیصلے کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ اگر روپے کی قدر گر رہی ہے تو شاہد خاقان سے نہیں اس فیصلے سے پوچھو اور اگراسٹاک مارکیٹ گر رہی ہے تو شاہد خاقان سے نہیں اس فیصلے سے پوچھو، ملک میں مہنگائی آئی ہے تو اس فیصلے سے پوچھو.

انہوں نے کہا کہ سازشی کون ہیں عوام سے پوچھو تو یہی جواب ملے گا کہ لاڈلے کے علاوہ کون ہو سکتا ہے، لاڈلہ مانتا ہے کہ میری بھی آف شور کمپنی موجود تھی، راشد خان کو پیسے میں نے بھیجے، نیازی سروسزمیری تھی لیکن ان اعترافات کے باوجود سپریم کورٹ کا محترم بینچ لاڈلے کو کہتا ہے کہ نہیں نہیں نیازی، تو ایسا نہیں ہے.

 

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں