سن 2018 لوڈشیڈنگ کے خاتمے کا سال ہے, وزیر اعظم -
The news is by your side.

Advertisement

سن 2018 لوڈشیڈنگ کے خاتمے کا سال ہے, وزیر اعظم

صصشیخوپورہ: وزیراعظم نوازشریف نے شیخوپورہ میں بکھی پاور پلانٹ کا سنگ بنیاد رکھتے ہوئے کہا کہ میں نے کبھی نہیں کہا کہ چھ مہینے میں بجلی کی قلت کا خاتمہ ہوگا، 2018 بجلی کے بحران کے خاتمے کا سال ہے۔

وزیراعظم نواز شریف آج بروزجمعہ شیخو پورہ میں پاور پلانٹ کا افتتاح کیا اوراس موقع پروزیراعلیٰ پنجاب شہباز شریف بھی ان کے ہمراہ موجود تھے۔

انہوں نے اظہارِتفاخرکرتے ہوئے کہا کہ نیپرا نے اس منصوبے کے لئے 95 ارب روپے کی منظوری دی تھی جب کہ حکومت اسے 55 ارب روپے میں تکمیل کررہی ہے۔

نوازشریف کا کہنا تھا کہ یہ منصوبہ پاک چین اقتصادی کاریڈور یا کسی بین الاقوامی امدادی منصوبے کا حصہ نہیں بلکہ حکومتِ پاکستان کے اپنے تین بجلی گھروں کا حصہ ہے۔

پہلے منصوبے کا سنگ بنیاد آج رکھ دیا گیا ہے جبکہ حویلی بہادرشاہ، جھنگ اور بھلوکی پاورپلانٹ پر بھی کام شروع کردیا جائے گا۔

ان کا یہ بھی کہنا تھا کہ پاکستان کو چلانا آسان کام نہیں ہے بہت محنت سے الٹی بہتی گنگا کو سیدھے رخ پر بہانا شروع کیا ہے۔

وزیراعظم نے کہا کہ میں نے کبھی نہیں کہا کہ چھ مہینے میں بجلی کی قلت کو ختم کردوں گا بلکہ 5 سالہ مدت میں بحران پرقابو پانے کی بات کی تھی اوراس پر قائم ہوں 2017 اور 2018 پاکستان میں بجلی کی قلت کے خاتمے کا سال ہوگا۔

انہوں نے کہا کہ بل جلانے سے بجلی پیدا نہیں ہوتی ہمارا مقصد محض بجلی پیدا کرنا نہیں بلکہ سستی بجلی پیدا کرنا ہے کہ عام آدمی کی دسترس میں آسکے۔

نوازشریف نے یہ بھی کہا کہ ’’ہمارے دورِحکومت میں مہنگائی پاکستان کی تاریخ کی کم ترین سطح پرہیں‘‘۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں