The news is by your side.

Advertisement

نیا پاکستان بنا دیتے، لیکن یہاں کام کرنے کون دیتا ہے: نواز شریف

اسلام آباد: سابق وزیر اعظم نواز شریف کا کہنا ہے کہ ہم اپنی حکومت میں نیا پاکستان بنا دیتے، لیکن یہاں کام کرنے کون دیتا ہے، پاکستان میں ٹانگیں کھینچنے سے روکیں گے تو کام ہوگا۔

تفصیلات کے مطابق احتساب عدالت میں پیشی کے موقع پر سابق وزیر اعظم اور مسلم لیگ ن کے قائد نواز شریف نے میڈیا سے غیر رسمی گفتگو کی۔

ان کا کہنا تھا کہ بھارت اور چین آپس میں دوستی کر رہے ہیں۔ افسوس ہم نے ماضی سے کچھ نہیں سیکھا۔

نواز شریف نے کہا کہ مجھے اقامے پر نااہل کیا گیا۔ ’ججز نے فیصلے میں لکھا کہ خواجہ آصف کو بھاری دل سے نااہل کیا، مجھےخوشی ہے میرے دل پر کوئی بوجھ نہیں ہے‘۔

انہوں نے کہا کہ ن لیگ کی حکومت جب بھی آئی ریکارڈ ترقیاتی کام ہوئے۔ ’تحریک انصاف کے نئے نعرے کئی سالوں سے سن رہے ہیں، ترقیاتی کاموں پر پنجاب کا سندھ سے موازنہ نہیں کیا جا سکتا‘۔

ان کا کہنا تھا کہ موٹر وے کی صورتحال دیکھ لیں سب کے سامنے ہے۔ ’ہم نیا پاکستان بنا دیتے، لیکن یہاں کام کرنے کون دیتا ہے، پاکستان میں ٹانگیں کھینچنے سے روکیں گے تو کام ہوگا‘۔

خیال رہے کہ احتساب عدالت میں شریف خاندان کے خلاف نیب ریفرنس کی سماعت کے لیے آج سابق وزیر اعظم نواز شریف اور ان کی صاحبزادی مریم نواز عدالت میں موجود ہیں۔

سماعت میں آج استغاثہ کے گواہ تفتیشی افسر عمران ڈوگر کا بیان ریکارڈ کیا جائے گا۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں۔ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں