The news is by your side.

Advertisement

اس حد تک بھی دشمنی نہیں کرنی چاہیے کہ ایک شخص کو گھیر لیا جائے: نواز شریف

نیب کے پاس اوربھی بہت سے کیسز ہیں، لیکن یہ سب کیسز چھوڑ کر ہمارے خاندان کے پیچھے پڑ گئے ہیں

اسلام آباد: سابق وزیر اعظم میاں نواز شریف نے کہا ہے کہ نیب کے پاس اوربھی بہت سے کیسز ہیں، لیکن یہ سب کیسز چھوڑ کر ہمارے خاندان کے پیچھے پڑ گئے ہیں.

ان خیالات کا اظہار انھوں نے اسلام آباد میں پارٹی رہنماؤں سے خطاب کرتے ہوئے کیا. ان کا کہنا تھا کہ آج تک نیب میں میری طرح کا کوئی مقدمہ نہیں آیا، میرا کیس نہ اختیارات کے ناجائز استعمال کا ہے، نہ ہی کرپشن کا، بطوروزیراعظم میرے ادوار میں کرپشن کا کوئی الزام نہیں.

کیا وجہ ہے کہ آج تک کسی پاکستانی وزیراعظم نے اپنی مدت پوری نہیں کی، بھارت میں حکومت اور وزیراعظم اپنی مدت پوری کرتے ہیں

میاں نواز شریف

ان کا کہنا تھا کہ سب جانتے ہیں کہ والد صاحب نے جائیداد کیسے بنائی، بھٹو دور میں تمام فیکٹریوں کو تحویل میں لے لیا گیا، فیکٹریوں کو نیشنلائز کیا گیا تو بدلے میں ایک پیسہ بھی نہیں دیا گیا.

سابق وزیر اعظم کا کہنا تھا کہ آج یہ سب چھوڑ کرہمارے خاندان کی جائیداد کنگھالنے میں لگ گئے، جلاوطنی گزاری، جیل میں ڈالا گیا لیکن پھربھی خاموش رہا، میں نے ہمیشہ اداروں کا احترام کیا، ہم نےعدلیہ کے لئےلانگ مارچ کیا اورعدلیہ بحال بھی ہوئی.

انھوں‌ نے کہا کہ دشمنی اس حد تک نہیں کرنی چاہیے کہ ایک شخص کو گھیرا لیا جائے، میں بھی ایک انسان ہوں، ہرمرتبہ عجب قیاس آرائیاں کی جاتی ہیں، بیگم کی عیادت کے لئے میرا لندن جانا ضروری تھا، عدالت سے استثنیٰ مانگا، جو نہیں ملا اور میں واپس آگیا.

انھوں نے سوال کیا کہ کیا وجہ ہے کہ آج تک کسی پاکستانی وزیراعظم نے اپنی مدت پوری نہیں کی، بھارت میں حکومت اور وزیراعظم اپنی مدت پوری کرتے ہیں، مگر پاکستان میں اُسے پھانسی پر چڑھا دیا جاتا ہے، جیل میں ڈال دیا جاتا ہے یا نااہل کر دیا جاتا ہے.

نوازشریف کا کہنا تھا کہ قائداعظم کے بعد تین افراد کو بھاری تعداد میں ووٹ پڑے، ذوالفقار بھٹو، بے نظیر اور تیسرا میں، بدقسمتی سے جب جب ملک ترقی کی راہ پر گامزن ہوتا ہے، تواس کاراستہ روکا جاتا ہے.

انھوں نے کہا کہ مجھ پرنیب کاایک نیا مقدمہ تیارہورہا ہے، الزام یہ ہے کہ رائےونڈ میں سڑک چوڑی کردی ہے، دکھ ہوتا ہے کہ میں نے ملک کوکیا بنا دیا اور میرے ساتھ کیا ہوا، وجہ تلاش کرنی چاہیے کہ دنیا پاکستان سے کیوں باہر جارہی ہے، ڈالر کہاں جارہا ہے، اسٹاک مارکیٹ مسلسل گررہی ہے، عوام کا مستقبل سنوارنے کے لئے میدان عمل میں نکلنا پڑتا ہے، ہمیں ڈرنا نہیں ہے، جدوجہد جاری رکھنی ہے.


نواز شریف کے زیر صدارت اجلاس، عوامی رابطہ مہم مؤثربنانے اور ملک بھر میں جلسوں کا فیصلہ


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں۔ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں