The news is by your side.

Advertisement

نااہل سابق وزیراعظم نواز شریف وطن واپس پہنچ گئے

اسلام آباد : پانامہ کیس میں نااہل ہونے والے سابق وزیر اعظم نواز شریف وطن واپس پہنچ گئے‘ کل احتساب عدالت میں پیش ہوں گے۔ لندن سے وطن روانگی کے وقتان کا کہنا تھا کہ مقدمہ پاناما کا تھا سزا اقامہ پر کیوں دی گئی؟۔

تفصیلات کے مطابق سابق وزیراعظم نواز شریف آج صبح آٹھ بجے لندن سے اسلام آباد ایئرپورٹ پر پہنچے ‘ جی ٹی روڈسے شروع ہونے والی ’ مجھے کیوں نکالا‘ کی تکرار ابھی بھی جاری ہے۔

Sher is back

سابق وزیراعظم پی آئی اے کی پرواز پی کے786سےاسلام آباد پہنچےہیں‘ اس موقع پر بینظیرانٹرنیشنل ایئرپورٹ کےاندر،باہراورپارکنگ ایریا میں سیکیورٹی کے سخت ترین اقدامات کیے گئے۔

نوازشریف کو وطن واپسی پرمسلم لیگ ن کا صدربنانے کا فیصلہ*

نوازشریف کے استقبال کے لیے مسلم لیگ ن سے تعلق رکھنے والےاسپیکرقومی اسمبلی ایازصادق سمیت وفاقی وزراء بڑی تعداد میں ایئرپورٹ پہنچے جن میں طارق فضل چوہدری،سعد رفیق مشاہد اللہ ،انوشہ رحمان ،ڈپٹی اسپیکر مرتضیٰ جاوید،مائزہ حمیدخرم دستگیر ،پرویز رشید،طلال چوہدری اور میئر اسلام آباد شامل ہیں۔

ان کی گاڑی راول لاؤنج سے ایئرپورٹ کے اندر پہنچائی گئی‘ جہاں سے وہ پنجاب ہاؤس چلے گئے۔ نااہل ہونے کے بعد بھی ایئرپورٹ پر انہیں شاہانہ پروٹوکول دیا گیا‘ نوازشریف کےقافلےمیں 58گاڑیاں شامل تھیں جبکہ سیکیورٹی کے لئے 3حصاربنائےگئے تھے۔

سابق وزیر اعظم اپنی اہلیہ بیگم کلثوم نواز کی تیمارداری کے لئے لندن میں تھے‘ لندن سے پاکستان روانہ ہوتے ہوئے نوازشریف کا کہنا تھا کہ عوام کےپیسےمیں بدعنوانی یاخیانت نہیں کی،نیب میں کس قسم کا ریفرنس دائر کیاگیاہے۔

نوازشریف کا کہناتھا کہ ہمارے1972کےمعاملات پرکس قسم کااحتساب ہورہاہے،بار بار کہا کرپشن،کک بیک یا کمیشن کا کیس نہیں ہے پاناما کا کیس تھا اقامہ پر سزا کیوں دی گئی؟۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں