The news is by your side.

Advertisement

انصاف نہ ملنا یا دیر سے ملنا ملک کا بڑا مسئلہ ہے‘ نوازشریف

اسلام اباد : سابق وزیراعظم نوازشریف کا کہنا ہے کہ موجودہ نظام میں اصلاحات کرنے کی ضرورت ہے، جامع نظام عدل لانے کے لیے کام کر رہے ہیں۔

تفصیلات کےمطابق احتساب عدالت میں پیشی کے موقع پر سابق وزیراعظم نوازشریف نے صحافیوں سے غیررسمی گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ جوچل رہا ہے ہم بھی دیکھ رہے ہیں آپ بھی دیکھ رہے ہیں۔

نوازشریف نے کہا کہ بہت کچھ دیکھا ہے آدھی زندگی گزر گئی، تجربات اچھے اور برے ہوئے ہیں، اچھے تجربات سے سیکھنے کو ملتا ہے، ملک و قوم کے لیے جو اچھا ہواس سے دل خوش ہوتا ہے۔

مسلم لیگ ن کے قائد نوازشریف نے کہا کہ تجربات دیگرسیاست دانوں کے ساتھ بھی ہوئے ان سے سیکھنا چاہیے، ایسا نظام لے کر آئیں گے جو ملک کی ضرورت ہے، انصاف نہ ملنا یا دیر سے ملنا ملک کا بڑا مسئلہ ہے۔

صحافی نے نوازشریف سے سوال کیا کہ اعتزازاحسن نے کہا کہ آپ سازش کرنے والے کا نام لیں ساتھ کھڑے ہوں گے؟ جس پر مسلم لیگ ن کے قائد نے جواب دیا کہ آپ کو لگتا ہے وہ ساتھ کھڑے ہوں گے۔

سابق وزیراعظم نے کہا کہ جن سیاست دانوں کے مقدمات ہیں ان پرکرپشن، کک بیکس کے الزام ہیں جبکہ میرا مقدمہ اپنی نوعیت کا پہلا کیس ہے جس میں ایسا کوئی الزام نہیں ہے۔


ایون فیلڈ ریفرنس: جے آئی ٹی سربراہ واجد ضیاء بیان ریکارڈ کراوئیں گے


واضح رہے کہ سابق وزیراعظم نوازشریف، مریم نواز اور کیپٹن ریٹائرڈ صفدر کے خلاف ایون فیلڈ ریفرنس میں واجد ضیاء اپنا بیان ریکارڈ کراوئیں گے۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں، مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کےلیے سوشل میڈیا پرشیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں