site
stats
پاکستان

چارسال پہلے تک کی خوف زدہ ٹیمیں اب پاکستان آ رہی ہیں، نواز شریف

لندن : سابق وزیر اعظم نواز شریف نے کہا ہے کہ 4 سال پہلے تک کوئی بھی ٹیم پاکستان آنے کو تیار نہ تھی لیکن ہماری کوششیں پاکستان کا وقار دوبارہ سے بحال ہوا اور کھیلوں کی سرگرمیاں شروع ہوئیں.

وہ لندن میں میڈیا سے گفتگو کر رہے تھے، نواز شریف نے کہا ہے کہ پاکستان مستحکم ہورہا ہے اور امن و امان کی صورت حال کافی بہتر ہوگئی ہے اور آج انہی پُر امن حالات کے باعث غیرملکی ٹیمیں پاکستان آکر کھیلیں.

انہوں نے کہا کہ کراچی والوں سے پوچھیں کہ 4 سال پہلے وہ کن حالات میں رہ رہے تھے اور یہی معاملہ فاٹا سے کوئٹہ تک بھی ہے جس میں اللہ نے ہمیں کامیابی دی اور جب پاکستان میں استحکام آیا تو ہم نے لوڈشیڈنگ کے خاتمے کے لیے کام کیا اور دہشت گردی و لوڈشیڈنگ جیسے بڑے مسائل ختم کیے.

نوازشریف نے کہا کہ جب سے مجھے نکالا گیا ہے اسٹاک مارکیٹ نیچے گرگئی ہے جس سے حکومت کمزور ہو سکتی ہے اور جب حکومت کمزور ہوتی ہے تو ملک کمزور ہوتا ہے اس لیے بے بنیاد الزامات سے گریز کرنا چاہیے اور ملک کی سلامتی کے لیے سب نےمل کر کام کرنا چاہیئے.

 اسی سے متعلق : بین الاقوامی کرکٹ کی بحالی کا سہرا نواز شریف کو جاتا ہے، مریم نواز

انہوں نے کہا کہ پاکستان دوبارہ مشکل دور سے گذر رہا ہے احمد نورانی پرحملے کی مذمت کرتا ہوں اور وزیراعظم کو مطیع اللہ جان، احمد نورانی پرحملوں کے واقعات کی تہہ تک پہنچنے کی ہدایت بھی کی ہے.

ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ افواہوں پر کان نہ دھرے جائیں، سب کو معلوم ہے کہ اہلیہ کلثوم نواز کا لندن میں کینسر کا علاج ہو رہا ہے اور ان کی کیمو تھراپی جاری ہے اس وجہ سے میں بھی یہاں موجود ہوں.

یاد رہے نواز شریف اپنی والدہ اور صاحبزادے حسن نواز کے ہمراہ عمرے کی ادائیگی کے لیے مکہ مکرمہ میں موجود تھے اور آج ریاض سے لندن پہنچے تھے جب کہ ان کے بارے میں کہا جا رہا تھا کہ وہ عمرے کی ادائیگی کے بعد پاکستان آئیں گے اور نیب عدالت میں پیش ہوں گے۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی وال پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top