The news is by your side.

Advertisement

نوازشریف پرجوتا پھینکنے والے تین ملزمان کی ضمانت پررہائی

لاہور : مقامی عدالت نے سابق وزیراعظم نواز شریف پر جوتا پھینکنے میں ملوث تین ملزمان کو ضمانت پر رہا کرتے ہوئے ایک ایک لاکھ روپے کے ذاتی مچلکے جمع کرانے کا حکم  دیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق جوڈیشل مجسٹریٹ سردار یوسف نے  سابق وزیر اعظم نواز شریف پر جوتا پھینکنے والے گرفتار ملزمان کی درخواست ضمانت پر سماعت کی۔

ملزمان کے وکیل نے عدالت کو بتایا کہ تینوں ملزمان عام شہری ہیں جنہوں نے توہین رسالت کے قانون میں ترمیم پر اشتعال میں آکر نواز شریف پر جوتا پھینکا ان ملزمان کا کسی سیاسی کا مذہبی گروہ سے کوئی تعلق نہیں ہے اور نہ ہی ان کا کوئی مجرمانہ ریکارڈ ہے۔

درخواست گزاروں نے استدعا کی کہ انہیں ضمانت پر رہا کیا جائے، عدالت نے ملزمان کی ضمانتیں منظور کرتے ہوئے انہیں ایک ایک لاکھ روپے کے ذاتی مچلکوں کے عوض رہا کرنے کا حکم دے دیا۔

واضح رہے کہ گزشتہ دنوں ملزمان عبدالغفور، ساجد اور منور نے سابق وزیر اعظم نواز شریف کے دورہ جامعہ نعیمیہ کے موقع پر تقریب سے خطاب کے دوران ان پر جوتا پھینک دیا تھا۔

بعد ازاں ملزمان کے خلاف دہشت گردی کی دفعات کے تحت مقدمہ درج کیا گیا تاہم بعد میں عدالت نے مقدمے میں سے دہشت گردی کی دفعات ختم کرتے ہوئے اسے عام عدالت کو بھجوا دیا تھا۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں‘ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔  

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں