The news is by your side.

Advertisement

عدالت کا احترام کرتا ہوں،قانونی جنگ لڑوں گا،نواز شریف

اسلام آباد : وزیر اعظم پاکستان میاں محمد نواز شریف نے پانامہ لیکس کیس میں سپریم کورٹ میں قانونی جنگ لڑنے کا فیصلہ کرلیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق وزیراعظم پاکستان میاں محمد نواز شریف نے کہا ہے کہ ہمارا دامن صاف ہے،سپریم کورٹ کے فیصلے کا کھلے دل سے خیرمقدم کرتے ہیں،عدالت عظمی سے بھی سرخروں ہو ں گے،انہوں نے قانونی جنگ لڑنے کا عندیہ دے دیا ہے۔

ذرائع کے مطابق سپریم کورٹ میں پانامہ لیکس کیس کی سماعت ہو ئی، سماعت کے بعد سپریم کورٹ نے وزیراعظم سمیت تمام فریقین کو نوٹس جاری کرکے دو ہفتے کے دوران جواب طلب کر لیا ہے جب کہ جوڈیشل کمیشن تشکیل نہ دینے کی درخواست بھی خارج کردی۔

سپریم کورٹ کے فیصلے کا خیر مقدم کرتے ہوئے وزیر اعظم کا کہنا تھا کہ ٹی اوآرز کی تشکیل کے لیے کمیٹی تشکیل دی تھی ، پھر پاناما کا معاملہ لاہور ہائی کورٹ،الیکشن کمیشن اور سپریم کورٹ میں آیا اسی لیے حکومت نے کمیشن کا اعلان کیا تھا کہ صاف شفاف تحقیقات سے قوم کو آگاہ کیا جاسکے۔

تا ہم چیف جسٹس کی سربراہی میں حاضرسروس کمشین کا مطالبہ آیا جومیں نے بغیرکسی ہچکچاہٹ کے قبول کیا کیوں کہ میں آئین کی پاسداری،قانونی کی حکمرانی اور انصاف کے حصول میں شفافیت پریقین رکھتا ہوں۔

نوازشریف نے کہا کہ سپریم کورٹ کی سربراہی میں حاضرسروس جج پرمشتمل کمیشن بنایا لیکن حکومتی نیک نیتی پرمبنی تمام کاوشوں کوکچھ کوششوں کوسبوتاژ کیا گیا۔

وزیراعظم کا مزید کہنا تھا کہ آئین کی پاسداری،قانون کی حکمرانی اورشفافیت پریقین ہے کچھ لوگوں کی جانب سے شفاف تحقیقات کے راستے میں مسلسل روکاوٹیں کھڑی کی گئیں لیکن اب بہتر یہی ہوگا کہ عدالتی فیصلے کا احترام کر لیا جائے۔

انہوں نے مزید کہا کہ پاناما لیکس کے معاملے پر قوم سے دو بارخطاب کیا اورمعززاسمبلی میں بھی اپنا موقف پیش کرچکا ہوں اورعوامی عدالت تو پے در پے مسلم لیگ ن کے حق میں فیصلے صادر کررہی ہے۔

 

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں