The news is by your side.

Advertisement

سروسز اسپتال میں نواز شریف کا علاج مریضوں کے لیے وبال جان، ٹیسٹ رپورٹس محکمہ داخلہ کو ارسال

لاہور: سروسز اسپتال میں نواز شریف کا علاج دوسرے مریضوں کے لیے وبالِ جان بن گیا، اسپتال کے 4 میں سے 3 گیٹ بند کر دیے گئے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق لاہور کے سروسز اسپتال میں زیرِ علاج مریض اور ان کے لواحقین شدید مشکلات کا شکار ہو گئے ہیں، جس کی وجہ نواز شریف کی سروسز اسپتال منتقلی ہے۔

نواز شریف کے تمام ٹیسٹ رپورٹس محکمہ داخلہ کو بھجوا دی گئیں۔

ذرائع

چار میں سے تین گیٹ بند ہونے کی وجہ سے لوگ اسپتال میں داخل ہونے کے لیے لمبا چکر کاٹنے پر مجبور ہو گئے ہیں۔

شہریوں کا کہنا ہے کہ نواز شریف کا علاج ہو رہا ہے تو ہمیں کس بات کی سزا دی جا رہی ہے، صرف ایمرجنسی کا گیٹ کھلا ہے، باقی تمام گیٹ بند کر دیے گئے ہیں۔

دوسری طرف سیکورٹی اہل کار گیٹ بند ہونے کے معاملے پر جواب دینے سے قاصر ہیں۔

دریں اثنا نواز شریف کے تمام ٹیسٹ رپورٹس محکمہ داخلہ کو بھجوا دی گئی ہیں، گزشتہ روز کیا جانے والا سی ٹی اسکین اور الٹرا ساؤنڈ کی رپورٹس بھی ارسال کی گئیں۔

یہ بھی پڑھیں:  میڈیکل بورڈ کے سربراہ کا نواز شریف کے علاج سے متعلق اہم انکشاف

ذرائع کا کہنا ہے کہ سی ٹی اسکین میں نواز شریف کے جسم کی شریانوں میں تنگی سامنے آئی ہے، انھیں بلڈ پریشر، شوگر، گردوں کا مسئلہ موجود ہے۔

ذرائع نے بتایا کہ نواز شریف کو عارضۂ قلب کا بھی پرانا مسئلہ ہے، میڈیکل بورڈ نے دل کے اسپتال منتقل کرنے کی سفارش بھی کی ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں