The news is by your side.

Advertisement

نواز شریف کے وطن واپسی کے شیڈول میں تیسری بار تبدیلی

اسلام آباد : سابق وزیراعظم نواز شریف لندن سے لاہور کے ٹکٹ میں تیسری بار تبدیلی آگئی ، اب نواز شریف 26 اکتوبر کے بجائے 7 جنوری کو پاکستان آئیں گے۔

تفصیلات کے مطابق سابق وزیراعظم نوازشریف کی وطن واپسی کا شیڈول پھر تبدیل ہوگیا، نواز شریف 26 اکتوبر کے بجائے7 جنوری کو واطن واپس آئیں گے، نوازشریف پی آئی اے کی پروازپی کے 758 سے 7جنوری کولاہور پہنچیں گے، ٹکٹ پہلے 4جنوری ، پھر 23 اکتوبر اور اب 7 جنوری کا کردیا گیا، نواز شریف کی سیٹ کا نمبر 5 اے ہے۔

نواز شریف کے سیکرٹری حنیف خان ان کے ہمراہ ہونگے۔

گذشتہ روز نوازشریف کی وطن واپسی سے متعلق متضاد اطلاعات تھیں، نواز شریف کے صاحبزادے حسن نواز کا کہنا تھا کہ نواز شریف سعودی عرب سے پاکستان جائیں گے، نوازشریف پاکستان جانے کے لئے ہی یہاں سے گئے ہیں، نوازشریف کےسعودی عرب جانے کا مقصد والدہ سے ملنا تھا۔

تاہم مسلم لیگ (ن) کے ذرائع نے نواز شریف کی وطن واپسی کی خبروں کی تردید کردی تھی۔


مزید پڑھیں : عمرے کے بعد نواز شریف پاکستان آنے کے بجائے لندن روانہ


پارٹی ذرائع کا کہنا تھا کہ   نوازشریف پاکستان نہیں آرہے، نوازشریف بیگم کلثوم کی طبیعت کےباعث لندن جائینگے۔

نواز شریف سعودی عرب میں عمرے کی ادائیگی اور والدہ سے ملاقات کے بعد وطن واپس آنے کے بجائے لندن رانہ ہوگئے تھے۔

اس سے قبل بھی نواز شریف کو لندن سے پی آئی اے کی پرواز سے لاہور آنا تھا تاہم سعودی عرب میں بیک چینل رابطوں کی بحالی پر شیڈول میں تبدیلی کردی گئی اور نواز شریف وطن آتے آتے لندن سے سعودی عرب پہنچ گئے تھے، جہاں انھوں نے عمرہ کی ادائیگی کی اور والدہ سے ملاقات کی۔

یاد رہے کہ نوازشریف پر تینوں ریفرنسز ایون فیلڈریفرنس، عزیزیہ اسٹیل ریفرنس اورفلیگ شپ ریفرنس میں فردِ جرم عائد ہوچکی ہے جبکہ انکے نمائندے کی جانب سے صحت جرم سے انکار کیا گیا ہے۔


مزید پڑھیں : نااہل وزیراعظم نوازشریف لندن روانہ


واضح رہے کہ نواز شریف اپنی اہلیہ کلثوم نواز کی عیادت کیلئے 5 اکتوبر کو لندن روانہ ہوئے تھے، ان کی ٹکٹ پرواپسی کی تاریخ چارجنوری دو ہزاراٹھارہ لکھی تھی۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی وال پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں