The news is by your side.

Advertisement

نازش جہانگیر کے لیے سب سے قیمتی چیز کیا ہے؟ اداکارہ نے بتادیا

کراچی: شوبز انڈسٹری کی معروف اداکارہ نازش جہانگیر نے اے آر وائی ڈیجیٹل کے پروگرام ’گڈ مارننگ‘ پاکستان میں شرکت کی اور میزبان ندا یاسر کے مختلف سوالات کے جوابات دئیے۔

اداکارہ نازش جہانگیر نے ماضی کی یادوں کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ وہ اور ’ان کا بھائی لوڈ شیڈنگ کے دوران گھروں کی بیل بجا کر بھاگ جایا کرتے تھے، ہم دونوں بہن بھائی بیل پر ڈبل ٹیپ لگاتے تھے جب لائٹ آتی تھی تو بیل مسلسل بج رہی ہوتی تھی۔‘

ایک اور واقعے کا ذکر کرتے ہوئے نازش جہانگیر نے بتایا کہ ’انہوں نے اور ان کی دوست نے نیا موبائل فون خریدا اور ڈھیر ساری شاپنگ کی تھی اس کے بعد اسلام آباد میں وہ گھومنے چلی گئیں۔‘

‘بیگ میں موبائل فون سمیت میک اپ کا سامان موجود تھا، ہم گاڑی کی سیٹ کے نیچے بیگ کے اوپر کپڑا ڈھک کر نیچے پانی میں اتر گئے، دو سے تین گھنٹے خوب انجوائے کرکے اوپر آئے تو گاڑی کا شیشہ کھلا ہوا تھا اور دونوں بیگ غائب تھے۔‘

اداکارہ نے بتایا کہ ’انہیں بیگ چوری ہونے کا دکھ نہیں لیکن اس میں شناختی کارڈ بھی موجود تھا وہ بھی بیگ ساتھ چلا گیا جس کا انہیں دکھ تھا۔‘

نازش جہانگیر نے کتابوں کو اپنی سب سے قیمتی چیز قرار دیتے ہوئے بتایا کہ ’اسکول ہو یا یونیورسٹی میرے پاس کتاب ہمیشہ موجود ہوتی تھی، کوئی دوست میری کتاب لے گئی تھی اور مجھے معلوم تھا کہ یہ حرکت کس نے کی، میں اس وقت چپ رہی کہ ایک دو گھنٹے میں پڑھ کر کتاب واپس کردی جائے گی۔’

اداکارہ نے بتایا کہ ’جب ایک دن گزر گیا اور کتاب واپس نہ ملی تو میں سیدھے اس دوست کے گھر پہنچ گئی، دوست نے جب پوچھا کہ کیسے آنا ہوا تو میں نے اس سے کہا کہ کتاب واپس کرو، نازش جہانگیر نے بتایا کہ وہ ابھی بھی کتابیں پڑھنے کی شوقین ہوں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں