The news is by your side.

Advertisement

سوشل میڈیا پر منفی پروپیگنڈا: مرکزی بینک کا وکیل ملازمت سے فارغ

قاہرہ : مصری عدالت نے سوشل میڈیا پر اپنے ساتھیوں کے خلاف جھوٹا پروپیگنڈا کرنے پر مرکزی بینک کے ایڈوکیٹ کو ملازمت سے فارغ کردیا۔

تفصیلات کے مطابق مصر میں اعلٰی عدلیہ نے مرکزی بینک میں بطور ایڈوکیٹ فرائض انجام دینے والے شخص کو فارغ کرنے کا فیصلہ سنا دیا جس نے سوشل میڈیا پر اپنے ساتھیوں کو ضرر پہنچایا تھا۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کا کہنا تھا کہ یہ پہلی مرتبہ ہے کہ مصر میں انفارمیشن ٹکنالوجی سے متعلق جرائم اور سائبر کرائمز کے انسداد کے قانون کا اطلاق کرتے ہوئے فیصلہ سنایا گیا ہے۔

عرب میڈیا کے مطابق مصری سپریم کورٹ نے اتوار کے روز حتمی فیصلہ جاری کیا۔

مدعی نے ایڈوکیٹ پر الزام عائد کیا تھا کہ وکیل نے اپنے فیس بک اکاونٹ پر بینک کے لاء ڈپارٹمنٹ میں ملازمت کرنے والے اپنے ساتھیوں کے خلاف من گھرٹ سازش کی تھی اور اپنے ساتھیوں کے خلاف انتہائی نامناسب اور نازیبا زبان کا استعمال بھی کیا تھا۔

عدالت کے مطابق مصری وکیل نے سوشل میڈیا کے ذریعے اپنے ساتھیوں اور مرکزی بینک کی ساکھ کو نقصان پہنچایا۔

خیال رہے کہ مصری پارلیمنٹ نے جون 2018 میں انفارمیشن ٹکنالوجی سے متعلق جرائم اور سائبر کرائمز کے انسداد کا قانون منظور کیا تھا۔

قانون کے ضمن میں انٹرنیٹ پر یا انفارمیشن ٹکنالوجی کے کسی ذریعے سے ایسی معلومات، خبریں یا تصاویر پوسٹ کرنا شامل ہے جن سے کسی شخص کی مرضی کے بغیر اس کی پرائیویسی کی خلاف ورزی ہوتی ہو، خواہ پوسٹ کی گئی معلومات درست ہو یا غلط۔۔۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں