پاکستان میں ہاکی کی بحالی ، مخالفین کا اے آروائی کے خلاف منفی پروپیگنڈا -
The news is by your side.

Advertisement

پاکستان میں ہاکی کی بحالی ، مخالفین کا اے آروائی کے خلاف منفی پروپیگنڈا

کراچی: شہرقائد میں قومی کھیل ہاکی کا تاریخ ساز ایونٹ منعقد کرانے پرسازشی عناصر کی آنکھوں میں اے آروائی ڈیجیٹل نیٹ ورک ایک بار پھر کانٹے کی طرح چبھنے لگا، منفی پروپیگنڈا شروع کردیا۔

اے آروائی ڈیجیٹل نیٹ ورک کی جانب سے جشن ِآزادی کےموقع پر عبدالستار ایدھی ہاکی اسٹیڈیم میں ہاکی ٹورنمامنٹ کا انعقاد کرایا گیا تھا جسے دیکھنے کے لیے کراچی کے عوام کی بڑی تعداد امڈ آئی تھی۔

واضح رہے کہ ’شکریہ پاکستان‘ کے اس تاریخ سازایونٹ کے لیے ہاکی فیڈریشن آف پاکستان اور حکومت سے باقاعدہ اجازت لی گئی تھی۔

کراچی میں ہاکی ایونٹ کا انعقاد اوراتنی بڑی تعداد میں عوام کی شرکت یقینا ً ایک تاریخ ساز واقعہ تھاجس نے تنزلی کا شکار قومی کھیل میں ایک بار پھر روح پھونک دی اور قومی کھیل کی بحالی کاکراچی سے آغاز سازشی عناصر کی نظروں کھٹکنے لگا اور انہوں پروپیگنڈا شروع کردیا کہ ایونٹ کے سبب میدان میں لگی جدید آسٹرو ٹرف خراب ہوگئی ہے۔

پروپیگنڈا کرنے والوں نے کہا کہ میدان کے اندر ایونٹ کے موقع پر ڈاگ شو منعقد کیا گیا اور ٹرف پرموٹرسائیکلیں چلائیں گئیں حالانکہ ڈاگ شو میدان سے باہر منعقد ہوا تھا اور موٹرسائیکل چلانے کے واقعے کو بھی بڑھا چڑھا کرپیش کیا جارہا ہے۔

اس موقع پر شہباز سینئر نے آروائی نیوز سے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ 20 سال بعدپاکستان میں ہاکی کا اتنا بڑا ایونٹ منعقد ہوا ہے جس کو سراہنے کے بجائے تنقید کا نشانہ بنانے کی کوشش کی جارہی ہے۔

انہوں نے یہ بھی کہا کہ گراؤنڈ کی آسٹرو ٹرف بالکل درست حالت میں ہے اور اسے کسی قسم کا نقصان نہیں پہنچا ہے ، منفی پروپیگنڈے سے پاکستان میں ہاکی کی بحال ہوتی سرگرمیوں پر بھی منفی اثر مرتب ہوگا، ان کا مزید کہنا تھا کہ اے آروائی ڈیجیٹل نیٹ ورک کے ایونٹ سے قبل کون جانتا تھا کہ پاکستان میں ایک جدید طرز کے حامل عالمی معیار کا ہاکی اسٹیڈیم موجود ہے جہاں عالمی سطح کے ٹورنامنٹ منعقد کیے جاسکتے ہیں۔

اسی حوالے سے اولمپئین وسیم فیروز کا کہنا تھا کہ 20 سال بعد اس قسم کی کوئی سرگرمی ہوئی ہے، انہوں نے یہ بھی بتایا کہ وزیراعظم کا ہیلی کاپٹر بھی اسی ٹرف پر اتر چکا ہے اور یہ ٹرف اتنی ناز ک نہیں ہوتی کہ موٹرسائیکل چلنے سے خراب ہوجائے۔

وسیم فیروز نے یہ بھی کہا کہ اے آروائی کا ایونٹ کامیاب رہا باقی لوگ بھی آگے آئیں اور منفی پروپیگنڈا کرنے کے بجائے ملک میں ہاکی کی بحالی کے لیے کوشاں ہوں۔

یاد رہے کہ جشنِ آزادی کو شایانِ شان طریقے سے منانے کے لیے اے آروائی نے شکریہ پاکستان کے نام سے مہم شروع کی تھی جس میں شہرکو دلہن کی طرح سجایا گیا تھا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں