The news is by your side.

Advertisement

متنازع بیان:‌ نہال ہاشمی سینیٹ کی رکنیت سے مستعفی

اسلام آباد : وزیراعظم نواز شریف کی ہدایت اور پارٹی ںظم و ضبط کی خلاف ورزی کرنے پر سینیٹر نہال ہاشمی نے قیادت کے حکم پر عہدے سے استعفیٰ دے دیا۔

تفصیلات کے مطابق پاناما کیس پرجاری احتساب کرنے والی جے آئی ٹی کے بارے میں متنازع بیان اور دھمکیاں دینے والے مسلم لیگ (ن) کے سینیٹر نہال ہاشمی کی پارٹی رکنیت معطل کردی جبکہ نہال ہاشمی نے اپنا استعفیٰ چیئرمین سینیٹ کو بھیج دیا۔

ذرائع کے مطابق نہال ہاشمی کو متنازع بیان منظرعام آنے کے بعد کافی تنقید کا سامنا رہا جس کا نوٹس لیتے ہوئے وزیراعظم نواز شریف نے نہال ہاشمی کو وزیراعظم ہاؤس طلب کرکے سخت برہمی کا اظہار کیا اورتنظیمی نظم وضبط کی خلاف ورزی پرنہال ہاشمی کومستعفی ہونےکی ہدایت کی۔

No automatic alt text available.
سوشل میڈیا پر وائرل ہونے والے استعفیٰ کا عکس

*نہال ہاشمی کی پانامہ کیس کی جے آئی ٹی کو کھلے عام سنگین دھمکیاں


خیال رہے کہ وزیراعظم کے اہل خانہ کے احتساب کے حوالے سے نہال ہاشمی نے ایک متنازع بیان دیا تھا جس پر سخت عوامی اور سیاسی رد عمل آیا تھا اور وفاقی وزیر مملکت نے اس بیان کو ذاتی رائے قرار دیا جب کہ وزیراعظم کی جانب سے برہمی کا اظہار کیا گیا تھا۔


*نہال ہاشمی کی پاناما جے آئی ٹی کو دھمکیاں ، وزیرا عظم نے وضاحت طلب کرلی


وزیراعظم نواز شریف کے ترجمان ڈاکٹر آصف کرمانی نے نہال ہاشمی کی وزیراعظم ہاؤس طلبی اور پارٹی رکنیت کی تصدیق کردی ہے جب کہ وفاقی وزیر مملکت مریم اورنگزیب نے بھی نہال ہاشمی سے استعفیٰ طلبی کی تصدیق کی ہے۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں