The news is by your side.

Advertisement

جھگڑے کے بعد پڑوسی نے عجیب و غریب حرکت کر ڈالی

شیفلڈ: پڑوسیوں میں جھگڑے ہوتے رہتے ہیں، لیکن برطانیہ میں ایک پڑوسی نے عجیب و غریب حرکت کر ڈالی، اس نے غصے میں آ کر گھر کے سامنے کھڑے چیڑ کے درخت کا اپنی گھر کی طرف کا آدھا حصہ ہی کاٹ ڈالا۔

یہ واقعہ برطانوی کاؤنٹی ساؤتھ یارکشائر کے شہر شیفلڈ میں پیش آیا، دو پڑوسیوں میں اس بات پر جھگڑا ہوا کہ دروازے کے پاس کھڑے درخت پر کبوتر آ کر بیٹ کر جاتے ہیں جو گھر کے دروازے کے پاس گرتی ہے اور راستہ گندا ہو جاتا ہے، جھگڑے کے بعد ایک پڑوسی نے اپنی طرف کا درخت کا آدھا حصہ کاٹ دیا۔

صفائی سے بالکل نصف کٹنے کے بعد درخت کی شکل عجیب لگنے لگی ہے، جس کے سبب اب لوگ اسے دیکھنے آنے لگے ہیں، اور درخت سیاحوں کے لیے دل چسپی کا سامان بن گیا ہے۔

معلوم ہوا کہ چیڑ کا درخت 25 سال سے وہاں کھڑا تھا، 56 سالہ بھرت مسٹری اور اس کی فیملی یہ دیکھ کر سخت مایوسی کا شکار ہو گئی، جب اس کے پڑوسی نے اسپیشلسٹس کو بلوایا اور درخت کی نصف شاخیں کٹوا دیں۔

ان پڑوسیوں کے درمیان ایک سال سے اس بات پر جھگڑا چل رہا تھا کہ درخت پر کبوتر آ کر شور مچاتے ہیں اور بیٹ کر جاتے ہیں، جس سے ڈرائیو وے میں گندگی پھیل جاتی ہے۔

بھرت مسٹری نے بتایا کہ ہم پڑوسیوں نے متفقہ طور پر درخت کو گیند کی شکل میں ترشوایا تھا، لیکن حال ہی میں اس پر پرندے آنے لگے، کیوں کہ سال کے اس وقت پرندوں کا آنا متوقع ہوتا ہے، لیکن پڑوسی نے پرندوں کو وہاں بیٹھنے سے روکنے کے لیے سیاہ شاپنگ بیگز رکھنا شروع کر دیا۔

بھرت مسٹری کے مطابق گزشتہ ہفتے پڑوسی نے اچانک ایک ٹری سرجن بلوایا اور ہمارے منع کرنے کے باوجود اس نے درخت کی اپنی طرف والی شاخیں کٹوا دیں، ہمیں سخت دکھ ہوا اس سے، ہم نے منتیں کر کر کے روکا لیکن وہ نہ مانا۔

بھرت کا کہنا تھا کہ پڑوسی کو درخت کاٹنے کا حق تھا کہ وہ اس کی پراپرٹی پر مسئلہ پیدا کر رہا تھا لیکن 25 سال سے کھڑے درخت کو کاٹنا تکلیف دہ ہے۔

تاہم جب اس باقی ماندہ درخت کی تصویر آن لائن پوسٹ کی گئی تو انٹرنیٹ صارفین میں یہ تیزی سے وائرل ہو گئی، اور اس کے بعد بڑی تعداد میں لوگ اس درخت کو ایک نظر دیکھنے آنے لگے ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں