The news is by your side.

Advertisement

مواخذے کے بعد ٹرمپ کے خلاف ایک اور معاملے میں تحقیقات کا آغاز

واشنگٹن: گزشتہ دنوں دو الزامات میں مواخذے کی تحریک کا سامنے کرنے والے امریکی صدر ٹرمپ کے خلاف ایک اور معاملے میں تحقیقات کا آغاز ہو گیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ پر فنڈز کی تقسیم میں جانب داری برتنے کا نیا الزام سامنے آ گیا ہے، امریکی احتساب آفس نے صدر ٹرمپ کے کسانوں کے لیے بیل آؤٹ پیکج کی تحقیقات کا آغاز کر دیا۔

امریکی میڈیا کا کہنا ہے کہ کسانوں کے لیے 28 بلین ڈالر کے بیل آؤٹ پیکج میں جانب داری کا مظاہرہ کیا گیا، ڈیموکریٹ سینیٹر ڈیبی اسٹیب ناؤ نے صدر ٹرمپ کے احتساب کے لیے درخواست دی تھی۔

مواخذے کی تحریک ناکام، سینیٹ نے ٹرمپ کو الزامات سے بری کر دیا

سینیٹر ڈیبی نے اس سلسلے میں کہا کہ ٹرمپ نے ری پبلکن جنوبی ریاستوں میں بیل آؤٹ پیکج کو استعمال کیا، ٹرمپ کے بیل آؤٹ پیکج میں کسانوں کی بہ جائےغیر ملکی کمپنیوں کو نوازا گیا گیا۔

خیال رہے کہ حال ہی میں امریکی صدر ٹرمپ دو الزامات میں مواخذے کی تحریک کا سامنا کرنے کے بعد اس سے سرخرو ہو کر نکلے ہیں، ٹرمپ کے خلاف مواخذے کی تحریک کو سینیٹ نے مسترد کر دیا تھا، مواخذے میں اختیارات سے تجاوز اور کانگریس کو کام سے روکنے کے الزامات لگائے گئے تھے۔ مواخذے کے پہلے الزام پر ووٹنگ میں ٹرمپ کے حق میں 52 اور مخالفت میں 48 ووٹ پڑے، جب کہ دوسرے الزام پر ووٹنگ میں ٹرمپ کے حق میں 53 اور مخالفت میں 47 ووٹ پڑے۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں