site
stats
پاکستان

تحفظ پاکستان اور انسداد دہشت گردی ایکٹ کو ملا کر نیا قانون لانے کا فیصلہ

اسلام آباد: حکومت نے دہشت گردوں کے خلاف نیا قانون لانے کا فیصلہ کرلیا۔ سیکیورٹی ادارے ملزمان کو 90 دن تک تحویل میں رکھ سکیں گے۔

تفصیلات کے مطابق دہشت گردوں کی مکمل سرکوبی کے لیے حکومت نے تحفظ پاکستان اور انسداد دہشت گردی ایکٹ کو ملا کر نیا قانون لانے کا فیصلہ کرلیا ہے۔ وزارت داخلہ نے نئے قانون کا مسودہ تیار کرلیا۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ قانون بننے کے بعد سیکیورٹی ادارے دہشت گردی میں ملوث ملزمان کو 90 دن تک تحویل میں رکھ سکیں گے۔

وزارت داخلہ کے ذرائع کے مطابق نئے قانون کے مسودے پر وزارت قانون سے مشاورت جاری ہے۔

واضح رہے کہ تحفظ پاکستان ایکٹ 15 جولائی 2014 کو 2 سال کے لیے بنایا گیا تھا۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top