The news is by your side.

Advertisement

وزیراعظم کا نئی ایوی ایشن پالیسی پر اظہار اطمینان، اجلاس میں پیش کرنے کی ہدایت

اسلام آباد : وزیر اعظم عمران خان نے نئی ایوی ایشن پالیسی2019کے مسودے پر اظہار اطمینان کرتے ہوئے اسے وفاقی کابینہ کے آئندہ اجلاس میں پیش کرنے کی ہدایت دے دی۔

تفصیلات کے مطابق اسلام آباد میں وزیر اعظم عمران خان کی زیر صدارت نے نئی ایوی ایشن پالیسی2019کے حوالے سے اجلاس ہوا جس میں سیکریٹری ایوی ایشن شاہ رخ نصرت نے نئی ایوی ایشن پالیسی پر وزیر اعظم کو تفصیلی بریفنگ دی۔

اجلاس میں وفاقی وزیر ہوا بازی محمد میاں سومر وفاقی وزیر اطلاعات فواد چوہدری اور وزیر اعظم کے معاون خصوصی نعیم الحق بھی موجود تھے۔

اس حوالے سے ترجمان پاکستان سول ایوی ایشن اتھارٹی نے بتایا کہ سیکریٹری ایوی ایشن نے اپنی بریفنگ میں بتایا کہ تجارتی ائیر لائنز اور دیگر آپریٹرز کے لائسنس کی معیاد ایک سال سے بڑھا کر دو سال کرنے اور پائلٹس و کیبن کریو کے لائسنس کی معیاد ایک سال سے بڑھا کرپانچ سال کرنے کی تجویز دی گئی ہے۔

اس کے علاوہ لائسنس کی ایک نئی قسم ٹورزم پروموشن اینڈ ریجنل انٹیگریشن (ٹی آر پی آئی) لائسنس متعارف کرائی جارہی ہے، مذکورہ نئے لائسنس کے تحت چلنے والی فلائٹس پر سی اے اے کے چارجز ختم کرنے کی تجویز دی گئی ہے۔

اجلاس میں نئی پالیسی کے لاگو ہونے کے بعد فضائی سفر کے نرخوں میں کمی کی توقع کا اظہار کیا گیا، نئی پالیسی میں ڈومیسٹک فلائٹس پر سی اے اے چارجز ختم کرنے کی تجویز بھی شامل کی گئی ہے۔

نئی پالیسی میں خواتین پائلٹس کو ٹریننگ کی مد میں سی اے اے کی جانب سے چار لاکھ روپے تک کی مالی معاونت کی سفارش بھی کی گئی ہے۔

وزیر اعظم عمران خان نے نئی ایوی ایشن پالیسی2019کے مسودے پر اطمینان کا اظہار کرتے ہوئے پالیسی کے مسودے کو وفاقی کابینہ کے آئندہ اجلاس میں پیش کرنے کی ہدایت دے دی ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں