The news is by your side.

Advertisement

پاکستان میں براڈ بینڈ سروسز کے اربوں روپے کے نئے منصوبے

اسلام آباد: پاکستان میں برانڈ بینڈ سروسز کے اربوں روپے کے نئے منصوبے منظور کیے گئے ہیں، وزارت آئی ٹی و ٹیلی کمیونیکیشن نے آپٹیکل فائبر اور براڈ بینڈ سروسز کے لیے 8 ارب روپے کے 7 منصوبوں کا اجرا کر دیا۔

اے آر وائی نیوز کے مطابق آئی ٹی وزارت نے آٹھ ارب کی خطیر رقم سے نئے اور بڑے منصوبوں کا آغاز کیا ہے، جن میں بلوچستان کو خصوصی ترجیح دے کر ساڑھے 3 ارب کے منصوبے شامل کیے گئے ہیں۔

یو ایس ایف بورڈ آف ڈائریکٹرز نے ان منصوبوں کی منظوری دے دی، وفاقی وزیر سید امین الحق نے اس حوالے سے بتایا کہ موجودہ حکومت کے دور میں 52 ارب روپے سے شروع کردہ منصوبوں کی تعداد اب ریکارڈ طور پر 56 ہوگئی ہے۔

امین الحق نے کہا حالات کچھ بھی رہے ہوں وزارت آئی ٹی اور اس کے ذیلی اداروں کی کارکردگی کا سلسلہ بدستور جاری ہے، واضح رہے کہ ان کا اشارہ ملک میں موجودہ نہایت کشیدہ سیاسی صورت حال کی طرف تھا، بالخصوص ان کی حکمراں پارٹی کو اپوزیشن کی جانب سے تحریک عدم اعتماد کی صورت میں ایک لٹکتی تلوار کا سامنا ہے۔

انھوں نے کہا ریکارڈ منصوبوں کے اجرا پر یونیورسل سروس فنڈ اور تمام ٹیم مبارک باد کی مستحق ہے، موجودہ حکومت میں شروع کیے گئے تمام منصوبوں کی مقررہ مدت میں پورا کیا جائے گا۔

واضح رہے کہ موجودہ پیکج میں قلعہ سیف اللہ اور ژوب کے 111 دیہاتوں میں فور جی سروسز کی فراہمی کے لیے 3 ارب 57 کروڑ روپے کا منصوبہ شامل کیا گیا ہے۔

جھنگ، بھکر اور ٹوبہ ٹیک سنگھ کے 722 دیہاتوں میں براڈ بینڈ سروسز کی فراہمی کے لیے 2 ارب 25 کروڑ کا منصوبہ شامل ہے، ہری پور اور اسلام آباد کی 6 یونین کونسلوں میں 106 کلومیٹر آپٹیکل فائبر کیبل بچھانے کے لیے 41 کروڑ کا منصوبہ ہے۔

لاڑکانہ، قمبر شہداد کوٹ کی 62 یونین کونسلوں میں 555 کلو میٹر آپٹیکل فائبر کے لیے ایک ارب 61 کروڑ کا منصوبہ شامل ہے، جب کہ ہکلہ ڈی آئی خان موٹر وے کے 95 کلو میٹر حصے پر 37 کروڑ 53 لاکھ کی لاگت سے براڈ بینڈ سروسز کا منصوبہ شامل کیا گیا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں