site
stats
پاکستان

نئی حلقہ بندیاں ممکن نہیں، الیکشن پرانے طریقے سے ہوں گے، الیکشن کمشنر

اسلام آباد: الیکشن کمیشن آف پاکستان نے نئی حلقہ بندیاں کرنے سے معذرت کرلی ہے، چیف الیکشن کمشنر کہتے ہیں 2018 کے انتخابات نئی حلقہ بندیوں کے مطابق نہیں کرسکتے۔

چیف الیکشن کمشنز کے جانب سے جاری ہونے والے بیان میں کہا گیا ہے کہ محکمہ شماریات نے مردم شماری کی رپورٹ اپریل 2018 سے پہلے دینے سے معذرت کرلی، مردم شماری رپورٹ ملنے تک حلقہ بندیاں نہیں ہوسکتیں۔

انہوں نے کہا کہ الیکشن ایکٹ 2017 کے تحت نئی حلقہ بندیوں کا معاملہ اٹھایا گیا تھا تاہم اب وہ کھٹائی کا شکار ہوتا نظر آرہا ہے اور آئندہ انتخابات بھی موجودہ حلقہ بندیوں پر کروانا مجبوری ہوگی۔

الیکشن کمشنر نے کہا کہ نیا الیکشن ایکٹ 2017 اب تک فائنل نہیں کیا گیا اور دوسری طرف مردم شماری رپورٹ میں تاخیر سے مسائل پیدا ہورہے ہیں، اس تمام تر صورتحال سے حکومت کو آگاہ کردیا ہے مگر وہ اس معاملے کو سنجیدگی سے نہیں دیکھ رہی۔

پڑھیں: ملک بھر میں نئی حلقہ بندیاں کرانے کا فیصلہ، الیکشن کمیشن کا اجلاس طلب

اس سے قبل ملک بھر میں نئی حلقہ بندیاں کرنے کے حوالے سے چیف الیکشن کمشنر نے اجلاس طلب کیا تھا جس میں چیف شماریات آصف باجوہ نے بریفنگ دینی تھی۔

یاد رہے 2013 کے عام انتخابات کے بعد تمام سیاسی جماعتوں نے الیکشن کمیشن میں تبدیلیوں اور نئی حلقہ بندیوں کا مطالبہ کیا تھا، حکومت کی جانب سے گزشتہ برس مردم شماری کا مرحلہ مکمل کرلیا گیا تاہم اُس کے حتمی رپورٹ ابھی تک جاری نہیں کی گئی۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top