The news is by your side.

Advertisement

2020: جاپانی بھی درگاہوں‌ پر جاتے اور منتیں‌ مانتے ہیں

اگر آپ کو ٹوکیو کی میجی درگاہ کے بارے میں معلوم ہے تو آپ اس بات سے بھی واقف ہوں گے کہ جاپانی بھی درگاہوں کا رخ کرتے ہیں اور وہاں عقیدت کے پھول نچھاور کرنا ان کے نزدیک قلبی اور روحانی سکون حاصل کرنے کا ذریعہ ہے۔

یہاں ہم نئے سال کی مناسبت سے جاپانی قوم کے بارے میں ایک دل چسپ بات بتا رہے ہیں۔ ہر سال کیلنڈر پر ہندسوں کی تبدیلی سے قبل جاپانی گزرتے ہوئے سال کو الوداع کہنا نہیں بھولتے اور اسی کے ساتھ نئے سال کی خوشیاں سمیٹنے کے لیے ٹوکیو کی مشہور درگاہ (میجی مزار) کا رخ کرتے ہیں۔ اس مزار پر لاکھوں لوگ حاضری دیتے ہیں اور یہاں اپنی، اپنے اہلِ خانہ کی صحت اور خوش حالی کی دعائیں مانگی جاتی ہیں۔

یہ دراصل جاپانیوں کے محبوب بادشاہ کا مقبرہ ہے جن کا اصل نام متشو ہیتو تھا۔ تاہم بعد از مرگ انھیں روایت کے مطابق مخصوص نام سے یاد کیا جاتا ہے۔ جاپان کی تاریخ کے مطابق اس شہنشاہ نے ملک کو جدیدیت کے راستے پر گام زن کیا۔ مشہور ہے کہ شہنشاہ میجی نے ایک زمانے میں بدی اور عوام دشمن طاقتوں کا اپنے تدبر اور ذہانت سے مقابلہ کرتے ہوئے پُرامن انقلاب برپا کیا اور اسے ترقی یافتہ ملک بنایا۔ یہی وجہ ہے کہ جاپانی ان سے بے پناہ عقیدت رکھتے ہیں۔

ٹوکیو میں شہنشاہ میجی کے مقبرے پر عام دنوں میں بھی رش رہتا ہے۔ یہاں ملک بھر سے برکت اور سکون حاصل کرنے کی تمنا لیے آنے والوں کی بڑی تعداد دیکھی جاسکتی ہے۔ درگاہ پر حاضری دینے والے مخصوص انداز سے تالی بجا کر اپنے دل کی مراد ظاہر کرتے ہیں اور درگاہ پر سکے پھینکتے جاتے ہیں۔ اسی طرح نئے سال کی آمد پر یہاں دعائیں کرنے اور منتیں مانگنے کے لیے بڑی تعداد میں لوگ اکٹھے ہوتے ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں