The news is by your side.

Advertisement

لندن : سیکیورٹی گارڈ کو قتل کرنے والے ملزمان پر فرد جرم عائد

لندن : پولیس نے سال نو کے آغاز پر سیکیورٹی گارڈ کو چاقو کے وار سے قتل کرنے والے دو خطرناک ملزمان کو گرفتار کرلیا۔

تفصیلات کے مطابق برطانیہ کے دارالحکومت کے مغربی علاقے میں جاری سال نو کی تقریب کے دوران 33 سالہ سیکیورٹی گارڈ چاقو زنی کی واردارت میں زخمی ہوا تھا جسے اسپتال منتقل کیا گیا تاہم وہ راستے میں ہی ہلاک ہوگیا تھا۔

مقامی خبر رساں ادارے کا کہنا ہے کہ مقتول سیکیورٹی گارڈ ملزمان کو فاؤنٹین ہاؤس میں داخل ہونے سے روک رہا تھا۔

مقامی خبر رساں ادارے کا کہنا ہے کہ گرفتار ملزمان کی شناخت 25 سالہ اسامہ حمید اور 23 سالہ نور ایڈن حمادا کے نام سے ہوئی ہے، جنہیں مجسٹریٹ کورٹ میں پیش کردیا ہے۔

لندن پولیس کے ترجمان کا کہنا ہے کہ دونوں خطرناک ملزمان ہیں جنہیں ہتھکڑیوں میں ہونا چاہیے۔

برطانوی میڈیا کا کہنا ہے کہ مقتول گارڈ کے ساتھ اس کے دو ساتھی 37 اور 29 سالہ شخص اور 29 سالہ خاتون زخمی ہوئے تھے جنہیں کچھ روز استپال سے ڈسچارج کردیا گیا تھا۔

مقامی میڈیا کے مطابق برطانوی عدالت نے فاؤنٹین ہاؤس واقعے میں ملوث ملزمان پر قتل، اقدام قتل اورخطرناک ہتھیار رکھنے کے الزام میں فرد جرم عائد کردی۔

مزید پڑھیں : لندن: فائرنگ اور چاقو زنی کی واردات، دو افراد قتل 4 زخمی

مزید پڑھیں : چاقوحملوں نےلندن کومیدان جنگ میں تبدیل کردیا ہے‘ ڈونلڈ ٹرمپ

یاد رہے کہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے گزشتہ برس کا کہا تھا کہ لندن میں بندوقیں نہیں ہوتیں لیکن وہاں چاقو ہوتے ہیں، لندن کا اسپتال چاقو حملوں کے زخمیوں سے بھرگیا اورکسی وارزون میں تبدیل ہوگیا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں