The news is by your side.

Advertisement

نیوزی لینڈ نے شاہینوں کے خلاف اسکواڈ کا اعلان کر دیا، قومی اسکواڈ کے ٹیسٹ مکمل

آکلینڈ: نیوزی لینڈ کرکٹ بورڈ نے شاہینوں کے خلاف نیوزی لینڈ اے کے مضبوط اسکواڈ کا اعلان کر دیا، نیوزی لینڈ میں موجود قومی اسکواڈ کے تیسرے کرونا ٹیسٹس بھی مکمل ہو گئے۔

تفصیلات کے مطابق نیوزی لینڈ کرکٹ ٹیم کا اعلان ہو گیا ہے، 13 رکنی اسکواڈ میں ویسٹ انڈیز کے خلاف نیوزی لینڈ کی جانب سے تیز ترین سینچری بنانے والے گلین فلپس، ڈیون کونوئے، ٹم سیفرڈ، جمی نیشم، لوکی فرگوسن اور ایش سوڈی شامل ہیں۔

پاکستانی شاہینز اور نیوزی لینڈ کے درمیان 4 روزہ میچ 10 دسمبر سے شروع ہوگا۔

دوسری طرف نیوزی لینڈ میں موجود قومی اسکواڈ کے تیسرے کرونا ٹیسٹس مکمل ہو گئے ہیں، 2 ہسٹارک کیسز کے حامل ارکان کو دوبارہ اسکواڈ جوائن کرنے کی اجازت دے دی گئی، طبی طور پر ان دونوں ارکان کو نان انفیکشس قرار دیا گیا ہے۔

نیوزی لینڈ میں موجود قومی کرکٹرز اور سپورٹ اسٹاف کی ہوٹل سے متصل گراؤنڈ میں چہل قدمی اور ہلکی پھلکی ٹریننگ جاری ہے، پی سی بی پُر امید ہے کہ آج ہونے والے تیسرے ٹیسٹس کے نتائج کے بعد قومی اسکواڈ کو گراؤنڈ میں ٹریننگ کی اجازت بھی مل جائے گی۔

دوسرا ٹی 20: نیوزی لینڈ نے ویسٹ انڈیز کو پھر شکست دے دی

واضح رہے کہ نیوزی لینڈ کے شہر کرائسٹ چرچ میں موجود قومی کرکٹرز اور سپورٹ اسٹاف کے پہلے روز کرونا ٹیسٹ کیے گئے تھے جس میں 6 کھلاڑیوں کے نتائج مثبت آئے، قومی ٹیم کے چند ارکان ہوٹل کے کوریڈور میں ایک ساتھ باتیں کرتے ہوئے سی سی ٹی وی میں دیکھے گئے، جس پر نیوزی لینڈ کرکٹ بورڈ نے کھلاڑیوں پر کرونا ایس او پیز کی خلاف ورزی کا الزام عائد کرتے ہوئے فائنل وارننگ جاری کی۔

27 نومبر کو پاکستان کرکٹ کے 48 ارکان کے دوسرے کو وِڈ 19 ٹیسٹ ہوئے تو قومی ٹیم کے ایک اور کھلاڑی میں کرونا کی تشخیص ہو گئی، 7 کھلاڑیوں میں کرونا کی تشخیص ہونے کے بعد پیر کے روز کھلاڑیوں کے تیسرے کرونا ٹیسٹ ہوئے جس میں 2 ہسٹارک کیسز کے حامل ارکان کو دوبارہ اسکواڈ جوائن کرنے کی اجازت دے دی گئی۔

پاکستان اور نیوزی لینڈ کے درمیان 3 ٹی ٹوینٹی اور 2 ٹیسٹ میچز کھیلے جائیں گے، پہلا ٹی ٹوینٹی میچ 18 دسمبر کو ہوگا، نیوزی لینڈ اور پاکستان کے درمیان ٹیسٹ سیریز کا آغاز 26 دسمبر سے ہوگا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں