The news is by your side.

Advertisement

نیوزی لینڈ میں چھ ماہ بعد کرونا سے پہلی ہلاکت، وزیراعظم کی وارننگ

آکلینڈ: نیوزی لینڈ میں چھ ماہ بعد کرونا سے ایک شخص کی ہلاکت پر جیسنڈا آرڈرن نے اہم ترین بیان جاری کیا ہے۔

غیر ملکی خبر رساں کے مطابق آکلینڈ میں نوے سالہ خاتون کرونا کے باعث چل بسی، تاہم متاثرہ خاتون کو دیگر بیماریاں بھی لاحق تھیں، نیوزی لینڈ میں چھ ماہ کے دوران کورونا سے ہونے والی یہ پہلی ہلاکت ہے، اس سے قبل رواں سال سولہ فروری کو کرونا سے ہلاکت رپورٹ ہوئی تھی۔

اس موقع پر نیوزی لینڈ کی وزیراعظم جیسنڈا آرڈرن نے کہا کہ خاتون کی ہلاکت ایک افسوسناک یاد دہانی ہے کہ حفاظتی اقدامات اختیار کرنا کیوں انتہائی اہم ہے، وزیر اعظم کا کہنا تھا کہ نیوزی لینڈ کی عمر رسیدہ آبادی اور وہ افراد جو دیگر بیماریوں میں مبتلا ہیں، انہیں وائرس سے سب سے زیادہ خطرہ لاحق ہے۔

یہ بھی پڑھیں: نیوزی لینڈ: فائزر ویکسین لگوانے کے بعد خاتون ہلاک

چھ ماہ کے وقفے سے اگست کے وسط میں کرونا وائرس کا پہلا کیس سامنے آیا تھا جس کے بعد ملک بھر میں لاک ڈاؤن نافذ کر دیا گیا تھا، اس کے بعد سے سات سو بیاسی کیسز ریکارڈ کیے جا چکے ہیں جن میں سے زیادہ تر آکلینڈ شہر میں سامنے آئے تھے۔

آکلینڈ میں کرونا سے نمٹنے کے لئے حفاظتی اقدامات پر سختی سے عمل درآمد کیا جا رہا ہے جبکہ دیگر شہروں میں پابندیوں میں نرمی کردی گئی ہے، صحت کے حکام کا کہنا ہے کہ کرونا وائرس کے نئے ڈیلٹا ویریئنٹ پر قابو پایا جا رہا ہے۔

واضح رہے کہ نیوزی لینڈ میں کرونا وائرس کے تین ہزار 748 کیسز سامنے آئے ہیں جبکہ دو ہزار 971 افراد صحت یاب ہوچکے ہیں جبکہ ستائیس افراد اس وبا کے باعث زندگی سے ہاتھ دھو بیٹھے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں