The news is by your side.

Advertisement

نیوزی لینڈ کی وزیراعظم جیسنڈا آرڈن کا بینظیر بھٹو کو خراج تحسین پیش

لندن :نیوزی لینڈ کی وزیراعظم جیسنڈا آرڈن نے ہاورڈیونیورسٹی میں بینظیربھٹو کوخراج تحسین پیش کرتے ہوئے جمہوریت کے بارے میں ان کے نظریے کو سراہا۔

نیوزی لینڈ کی وزیراعظم جیسنڈا آرڈن ہاورڈ یونیورسٹی میں تقریب سے خطاب کے دوران پاکستانی وزیراعظم بینظیربھٹوکی تعریف کیے بغیرنہ رہ سکیں۔

تفصیلات کے مطابق نیوزی لینڈ کی وزیراعظم جیسنڈا آرڈن ہاورڈ یونیورسٹی میں تقریب سے خطاب کے دوران پاکستانی وزیراعظم بینظیربھٹوکی تعریف کیے بغیرنہ رہ سکیں۔

جسینڈا آرڈن نے خطاب میں جمہوریت کے بارے میں بےنظیر کے نظریے کو خراج تحسین پیش کرتے ہوئے کہا بینظیر کے جمہوریت کے بارے میں خیالات آج بھی سچ لگتے ہیں۔

 

View this post on Instagram

 

A post shared by Jacinda Ardern (@jacindaardern)

انہوں نے کہا کہ ‘جون 1989 میں پاکستان کی وزیر اعظم نے اسی جگہ پر کھڑے ہو کرخطاب کیا تھا ، جس میں انھوں نے اپنے سفر، نمائندہ حکومت، انسانی حقوق اور جمہوریت کے بارے میں بات کرتے ہوئے کہا تھا کہ جمہوری قوموں کو متحد ہونا چاہیے’۔

جیسنڈا آرڈرن نے نے نظیر بھٹو سے اپنا موازنہ کرتے ہوئے کہا کہ دنیا میں موجود تمام سیاسی اختلافات کے باوجود بینظیر کے بارے میں دو باتیں ناقابل تردید ہیں، پہلی بات کہ وہ ایک اسلامی ملک میں منتخب ہونے والی پہلی مسلم خاتون وزیر اعظم تھیں، جب اقتدارمیں عورت کا ہونا ایک نایاب چیز تھی اور دوسری بات وہ وزارت عظمیٰ کے منصب کے دوران بچے کو جنم دینے والی بھی پہلی خاتون تھیں۔

اپنی تقریر میں آرڈن نے بتایا کہ وہ بینظیر بھٹو کے قتل سے سات ماہ قبل 2007 میں جنیوا میں ان سے ملی تھیں۔

ان کا کہنا تھا کہ میں دنیا کی دوسری خاتون وزیراعظم ہوں ، جس نے وزارت اعظمیٰ کے منصب پر فائز رہتے ہوئے بچے کو جنم دیا۔

نیوزی لینڈ کی وزیراعظم نے بتایا کہ میری بیٹی 21 جون 2018 کو پیدا ہوئی، بیٹی اور بینظیر کا تاریخ پیدائش بھی ایک ہے

Comments

یہ بھی پڑھیں