The news is by your side.

Advertisement

کورونا وائرس : نیوزی لینڈ جانے والے مسافروں کی بڑی مشکل آسان

نیوزی لینڈ نے کورونا ایس او پیز میں نرمی اختیار کرتے ہوئے شہریوں کے لیے سفری پابندیاں اٹھانے کا اعلان کیا ہے۔فیصلے کے تحت فضائی مسافروں کے لیے قرنطینہ کی شرط ختم کردی گئی ہے۔

اس حوالے سے میڈیا ذرائع کا کہنا ہے کہ دنیا بھر سے نیوزی لینڈ آنے والے مسافروں کے لیے قرنطینہ کی شرط ختم کی جارہی ہے۔

نیوزی لینڈ کی وزیراعظم جیسنڈا آرڈرن نے گزشتہ روز اپنے بیان میں کہا ہے کہ ویکسین شدہ مسافروں کے لیے نیوزی لینڈ پہنچنے پر ایک ہفتے کا قرنطینہ کرنے کی شرط بدھ کو ختم ہوجائے گی۔

آسٹریلیا اور نیوزی لینڈ نے سفری پابندی ختم کردی

انہوں نے کہا کہ ابتداء میں یہ تبدیلی صرف واپس آنے والے نیوزی لینڈ کے شہریوں کے لیے ہوگی جبکہ سیاحوں کو ابھی بھی آنے کی اجازت نہیں ہے۔

قرنطینہ کی شرط ختم ہونے کے بعد بھی مسافروں کو ملک کے لیے سفر کرنے سے پہلے اور پہنچنے کے بعد کورونا ٹیسٹ کی منفی رپورٹ کی ضرورت ہوگی۔

نیوزی لینڈ کی وزیر اعظم نے کہا کہ وہ جانتی ہیں کہ یہ بیرون ملک موجود ہمارے لوگوں کے لیے خوشی کی خبر ہوگی، جو جلد از جلد گھر آنے اور احباب سے ملنے کے لیے بیتاب ہیں۔

حکومت کی جانب سے کی گئی ان تبدیلیوں پر سیاحتی شعبے نے مسرت کا اظہار کیا ہے البتہ رہنماؤں نے سیاحوں کی واپسی ہونے کے متعلق مزید یقین دہانی مانگی ہے۔

واضح رہے کہ بین الاقوامی سیاحت کی مد میں نیوزی لینڈ 20 فیصد آمدنی کماتا ہے جو عالمی وباء کے آنے سے اب تک تقریباً ختم ہوچکی ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں