The news is by your side.

Advertisement

دورہ نیوزی لینڈ: قومی کرکٹ ٹیم کو سفر کرنے کی اجازت مل گئی

ولنگٹن : نیوزی لینڈ کا دورہ کرنے والی پاکستان کرکٹ ٹیم کے لئے اچھی خبر ہے کہ ان کا مینیجڈ آئسولیشن پریڈ ختم ہوگیا ہے اور کھلاڑیوں نے کھلی فضا میں سانس لیا۔

تفصیلات کے مطابق مینیجڈآئسولیشن ختم ہونے کے بعد مقامی ہوٹل میں دو گھنٹے قیام کے بعد قومی اسکواڈ بذریعہ پرواز کوئنز ٹاؤن روانہ ہو گا، مقامی وقت کے مطابق رات آٹھ بجے پاکستانی اسکواڈ کوئنز ٹاؤن پہنچے گا۔

کوئنز ٹاؤن پہنچنے پر قومی کرکٹ ٹیم اور پاکستان شاہینز کے اسکواڈز علیحدہ علیحدہ ہوٹلز میں قیام کریں گے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ اسکواڈ میں شامل ایک رکن آکلینڈ سے آج کوئنز ٹاؤن پہنچ جائے گا جب کہ دوسرا رکن جمعرات کو کوئنز ٹاؤن میں موجود اسکواڈ کو جوائن کرے گا۔

واضح رہے کہ دورہ نیوزی لینڈ کے لئے جانے والی پاکستان کرکٹ ٹیم کے دس ارکان کے کرونا ٹیسٹ مثبت آئے تھے، دورہ نیوزی لینڈ میں ٹریننگ سے قبل پاکستان کرکٹ اسکواڈ کی چار بار کووڈ 19 ٹیسٹنگ کی گئی، نیوزی لینڈ وزارت صحت کا کہنا تھا کہ کرونا میں مبتلا 10 ارکان کے دوبارہ ٹیسٹ نہیں ہوئے، منگل 8 دسمبر کو قرنطینہ کا دورانیہ مکمل ہو جائے گا، اس کے بعد ٹیم کو ٹریننگ کی اجازت دی جائے گی۔

یہ بھی پڑھیں:  پاکستانی اسکواڈ کے آخری کرونا ٹیسٹ کے نتائج بھی آ گئے

واضح رہے کہ چند روز قبل وسیم اکرم نے ایک بیان میں کہا تھا کہ پی سی بی کو چاہیے تھا کہ وہ کرکٹرز کو زیادہ وقت پاکستان میں آئسولیشن میں رکھتے، پاکستان میں ہی 14 روز کا آئسولیشن کرانا چاہیے تھا، ٹیم کو واپس بھیجنے کا نیوزی لینڈ بورڈ کا بیان پاکستان کے لیے کافی شرمندگی کا باعث بنا۔

انھوں نے نیوزی لینڈ میں پاکستان ٹیم کی صورت حال پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ نیوزی لینڈ میں موجود قومی کھلاڑیوں کی ہمت ہے کہ وہ کمروں میں بند ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں