The news is by your side.

Advertisement

انکیوبیٹر میں آگ لگنے سے بچی کی ہلاکت: نومولود بچی کرنٹ لگنے سے جاں بحق ہوئی

کراچی: صوبہ سندھ کے دارالحکومت کراچی کے قومی ادارہ برائے امراض اطفال (این آئی سی ایچ) میں لگنے والی آگ کے بارے میں کہا گیا ہے کہ جلنے والے انکیوبیٹر کے اندر موجود بچی، کرنٹ لگنے اور دھوئیں کی وجہ سے جاں بحق ہوئی۔

تفصیلات کے مطابق چند روز قبل قومی ادارہ برائے امراض اطفال (این آئی سی ایچ)میں آگ لگنے اور بچی کے جھلس کر جاں بحق ہونے کے بارے میں صوبہ سندھ کی وزیر صحت عذرا افضل پیچوہو کا کہنا ہے کہ واقعہ غفلت کا نتیجہ ہے، آگ لگ گئی تھی تو بچے کو بچانے کی کوشش کرنی چاہیئے تھی۔

صوبائی وزیر کا کہنا تھا کہ 4 رکنی کمیٹی واقعے کی تحقیقات کر رہی ہے، کمیٹی نے متاثرہ خاندان، متعلقہ ڈاکٹرز اور پیرا میڈیکل اسٹاف کا بیان ریکارڈ کیا۔ دکھ کی گھڑی میں متاثرہ خاندان کے ساتھ ہیں۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ کمیٹی نے انکیوبیٹر بنانے والی کمپنی کے وینڈر کو طلب کرلیا ہے، انکیوبیٹر بنانے والی کمپنی اپنے وینڈر کے ذریعے بیان ریکارڈ کروائے گی۔

ذرائع کے مطابق آگ لگنے سے انکیوبیٹر کا صرف پنکھا اور تاریں جلیں۔ آگ نے انکیوبیٹر کی الیکٹرک سپلائی اور ہیٹر کو نقصان نہیں پہنچایا۔ انکیوبیٹر میں موجود آکسیجن شارٹ سرکٹ کے باعث آگ کا سبب بنی۔

ذرائع کا کہنا ہے نومولود بچی کی موت کرنٹ لگنے اور دھواں بھرنے سے ہوئی۔

خیال رہے کہ چند روز قبل قومی ادارہ برائے امراض اطفال (این آئی سی ایچ) کے آئی سی یو میں ایک انکیوبیٹرمیں اچانک آگ بھڑک اٹھی تھی۔ آگ لگنے سے انکیوبیٹر کے اندر موجود نومولود بچی اندر ہی جاں بحق ہوگئی تھی۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں