The news is by your side.

Advertisement

کسی میں ہمت نہیں بلوچستان کو پاکستان سے علیحدہ کرے،ثناءاللہ زہری

زیارت: وزیراعلیٰ بلوچستان ثنا اللہ زہری کہتے ہیں کہ ہم محب وطن اور اپنے وطن کے وارث ہیں کوئی مائی کا لعل بلوچستان کو پاکستان سے الگ نہیں کرسکتا۔

وہ زیارت میں یوم آزادی کے موقع پر پرچم کشائی کی تقریب سے خطاب کررہے تھے ثناء اللہ زہری کا کہنا تھا کہ دہشت گردی کی جنگ کو ادھورا نہیں چھوڑنا چاہئے،بہادر قومیں سانحات کا مقابلہ کرتی ہیں،اُن سے سیکھتی ہیں اور اب انشاءاللہ دہشت گردوں کو دہشت گردوں کو وار کرنے سے پہلے ہی ٹھکانے لگادیں گے۔

اس سے قبل صوبائی دارالحکومت میں 21 توپوں کی سلامی سے یوم آزادی کا آغاز ہوا،توپوں کی سلامی کے بعد بلوچستان اسمبلی میں پرچم کشائی سادہ مگر پر وقار تقریب منعقد ہوئی، وزیراعلیٰ بلوچستان نواب اللہ زہری نے پرچم کشائی کی جبکہ قومی پرچم سے ہم آہنگ لباس زیب تن کئے بچوں نے خوبصورت ملی نغمے پیش کرکے بلاخوف و خطرآگے بڑھنے کا پیغام دیا۔

تقریب میں کمانڈر سدرن کمانڈ لیفٹیننٹ جنرل عامر ریاض‘ اسپیکر بلوچستان سمبلی راحیلہ حمید درانی پشتونخواہ ملی عوامی پارٹی کے سربراہ محمود خان اچکزئی ‘صوبائی وزراءاور دیگر اعلیٰ سول و عسکری افسران شریک ہوئے، وزیر اعلیٰ بلوچستان نے سانحہ کوئٹہ کو المناک واقعہ قرار دیتے ہوئے کہا کہ ہمارے حوصلے پست نہیں ہوئے دشمن کے چیلنج کا ڈٹ کا مقابلہ کریں گے۔

انہوں نے کہا کہ اب ہم بلند حوصلے اور زیادہ تیاری کے ساتھ دشمن پر کاری ضرب لگائیں گے کیوں کہ ہم دہشت گردی کے خلاف جنگ میں ہم حق پر ہیں اس لیے جیت بھی ہماری ہو گی آج ہم عزم کرتے ہیں کہ دہشت گردوں سے اگلے قدموں پر لڑتے رہیں گے۔

وزیر اعلیٰ بلوچستان نے کہا کہ ہم محب وطن اور اپنے وطن کے وارث ہیں کوئٹہ میں دہشت گردی کے باوجود خوف نہیں، کشمیر اور بلوچستان کے مسائل کی نوعیت الگ الگ ہے، بلوچستان کے وارث ہم ہیں مودی نہیں، ہم سو مرتبہ پیدا ہوکر سو مرتبہ بھی اپنے وطن پر قربان ہوں تو بھی کوئی غم نہیں۔

انہوں نے کہا کہ باہر بیٹھے لوگ آکر پاکستان کی سیاست کریں اور پہاڑوں پرچھپے لوگ آکر قومی دھارے میں شامل ہوجائیں، بندوق اٹھانے والے بھی الیکشن لڑ کر اپنی اہمیت کا اندازہ کرلیں،ہرآزاد ملک کو ترقی کرنے کا حق ہے، پاک چین اقتصادی راہ داری اغیار کی آنکھوں میں کھٹک رہی ہے لیکن ہم اپنی جانوں پر کھیل کر اقتصادی راہداری کی حفاظت کریں گے۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں