The news is by your side.

Advertisement

پاکستان میں کروناوائرس کا کوئی کیس سامنے نہیں آیا، غلط رپورٹنگ کی جارہی ہے،ظفر مرزا

اسلام آباد : وزیراعظم کے معاون خصوصی برائے صحت ڈاکٹرظفرمرزا نے کہا ہے کہ پاکستان میں کروناوائرس کو کوئی کیس سامنے نہیں آیا ، پہلےکیس سےمتعلق غلط رپورٹنگ کی جارہی ہے،شہریوں کی تشویش میں اضافہ نہ کیا جائے۔

تفصیلات کے مطابق وزیراعظم کے معاون خصوصی برائے صحت ڈاکٹرظفرمرزا نے کہا کرونا وائرس کا پہلا کیس سامنے آنے سےمتعلق غلط رپورٹنگ کی جارہی ہے، معاملے پرمیڈیا کی جانب سے ذمے دار رپورٹنگ کی امید کرتے ہیں۔

ڈاکٹر ظفر مرزا کا کہنا تھا کرونا وائرس کے حوالے سے تشویش میں اضافہ نہ کیا جائے، معاملے پر رپورٹنگ سے پہلے حقائق لازمی چیک کریں۔

دوسری جانب ملتان میں سربراہ قومی ادارہ صحت ڈاکٹرعامراکرام نے وضاحت کرتے ہوئے کہا ملتان میں کروناوائرس کاکیس سامنےآنےکی خبربےبنیادہے، ملک میں تاحال کروناوائرس کاکیس سامنےنہیں آیا۔

مزید پڑھیں : پاکستان میں کرونا وائرس کا پہلا مریض سامنے آگیا

سربراہ قومی ادارہ صحت کا کہنا تھا کہ ملتان میں مریض میں کروناوائرس کی تاحال تصدیق نہیں ہوئی، مریض کو مقامی اسپتال کےآئیسولیشن وارڈ منتقل کیا ہے، مریض میں کروناوائرس کی علامات ظاہرنہیں ہوئیں، مریض کے نمونے ٹیسٹ کیلئے لیبارٹری بھجوادیئےہیں۔

یاد رہے گذشتہ روز پاکستان میں کروناوائرس کاپہلا مشتبہ مریض سامنے آیا تھا ، کروناوائرس سےمتاثرہ مسافرچین سےدبئی اوراکیس جنوری کوکراچی پہنچا، اور کراچی سے مشتبہ مریض جہاز کے ذریعہ ملتان پہنچا تھا، ملتان میں قیام کےدوران طبعیت خراب ہونے پر مریض کو نشتر اسپتال منتقل کیا گیا۔

خیال رہے پاکستان نے کرونا وائرس کی ممکنہ خطرے کے پیش نظر عالمی لیبارٹریوں سے رابطہ کرلیا ہے۔ ظفرمرزا کا کہنا تھا کہ وائرس کی پاکستان میں تشخیص کی سہولت نہیں ،رپورٹ ہونیوالے مشتبہ کیسز کے سیمپلزبین الاقوامی لیبارٹریز بھیجےجائیں گے۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں