The news is by your side.

Advertisement

2 ماہ بعد دوبارہ سے کورونا کے مریضوں میں اضافہ ہونا شروع

لاہور : 2ماہ بعد دوبارہ سے کوروناکے مریضوں میں اضافہ ہونا شروع ہوگیا اور اکتوبر میں مریضوں کی یومیہ اوسطاً تعداد 60 تک پہنچ گئی، عثمان بزدار نے کہا ہے کہ کورونا کا پھیلاؤ روکنے کیلئے شہریوں کا پہلے کی طرح تعاون ضروری ہے۔

تفصیلات کے مطابق پنجاب میں 2ماہ بعد دوبارہ سے کوروناکے مریضوں میں اضافہ ہونا شروع ہوگیا ، رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ اگست اور ستمبر میں یومیہ اوسطاً مریضوں کی تعداد 25 تھی ، لاہور میں اکتوبر کے پہلے 11دن میں 670 مریض رپورٹ ہوئے اور اکتوبر میں مریضوں کی یومیہ اوسطاً تعداد60 تک پہنچ گئی۔

سرکاری اسپتالوں میں کرونا کے 16 سنجیدہ مریض زیر علاج ہے جبکہ سرکاری اسپتالوں میں مشتبہ مریضوں کوکورونا ٹیسٹ پرمشکلات کا سامنا ہے۔

چیئرمین کوروناایکسپرٹ پروفیسرمحمود شوکت کا کہنا ہے کہ کوروناایس او پیز پر عملدرآمد نہ ہونے سے کیسز بڑھے، جلسے جلوس، نجی تقریبات بھی کورونا میں اضافے کا باعث ہیں، موسم کی تبدیلی کورونا کی شدت سے واپسی کا ذریعہ بن سکتی ہے۔

دوسری جانب وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار نے کہا ہے کہ پنجاب میں 24گھنٹے کےدوران کورونا کے 77نئے کیس سامنے آئے اور کوروناکاایک مریض جاں بحق ہوا جبکہ صوبے میں صحت یاب مریضوں کی تعداد 96 ہزار 945 ہے۔

عثمان بزدار کا کہنا تھا کہ پنجاب میں کورونا کے فعال کیسزکی تعداد1561ہے، 24گھنٹے میں11ہزار82ٹیسٹ کیےگئے جبکہ مجموعی طورپراب تک 13 لاکھ 74ہزار 480 ٹیسٹ کیے جا چکے ہیں۔

انھوں نے مزید کہا کہ پنجاب میں تشویشناک مریضوں کی تعداد21ہے جبکہ اب تک 2258مریض کورونا کے باعث جاں بحق ہوچکے ہیں۔

عثمان بزدار کا کہنا تھا کہ ستمبر کی نسبت اکتوبر کے 12دن میں مریضوں کی تعداد معمولی اضافہ ہے، کورونا کا پھیلاؤ روکنے کیلئے شہریوں کا پہلے کی طرح تعاون ضروری ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں