The news is by your side.

Advertisement

تاحیات نااہلی : سپریم کورٹ نے بھی فیصل واوڈا کی فیصلہ معطل کرنے استدعا مسترد کردی

اسلام آباد : سپریم کورٹ نے پی ٹی آئی رہنما فیصل واوڈا کی تاحیات نااہلی کا فیصلہ کالعدم قرار دینے اور سینیٹ کی خالی نشست پر انتخابات روکنے کی استدعا مسترد کردی۔

تفصیلات کے مطابق سپریم کورٹ میں پی ٹی آئی رہنما فیصل واوڈا کی نااہلی کے فیصلے کیخلاف اپیل پر سماعت ہوئی ، چیف جسٹس کی سربراہی میں3رکنی بینچ نےاپیل پرسماعت کی۔

فیصل واوڈا کے وکیل نے خالی نشست پرسینیٹ الیکشن روکنے اور تاحیات نااہلی کا فیصلہ معطل کرنے کی استدعا کی، جسے عدالت نے مسترد کردیا۔

چیف جسٹس عمرعطاء بندیال نے ریمارکس دیے کہ درخواست گزارکا الیکشن کمیشن کےاختیارسےمتعلق اعتراض اہم ہے، الیکشن کمیشن کے پاس تاحیات نااہلی کا اختیارغور طلب معاملہ ہے، جعلی بیان حلفی دیا گیا ہے، فوری فیصلہ معطل نہیں کرسکتے۔

چیف جسٹس کا کہنا تھا کہ سپریم کورٹ کے فیصلے کے مطابق جھوٹے بیان حلفی کے سنگین نتائج ہوں گے۔

عدالت نے الیکشن کمیشن اور اٹارنی جنرل کو نوٹس جاری کرتے ہوئے سماعت غیر معینہ مدت کیلئے ملتوی کردی۔

یاد رہے 9 فروری کو الیکشن کمیشن نے فیصل واوڈا کی دوہری شہریت کیس کا محفوظ فیصلہ سناتے ہوئے انہیں نااہل قرار دے دیا تھا۔

الیکشن کمیشن کی جانب سے جاری مختصر فیصلے میں کہا گیا تھا کہ فیصل واوڈا نے اپنےکاغذات نامزدگی میں غلط بیانی سےکام لیا اور کاغذات نامزدگی کےوقت جعلی حلف نامہ جمع کرایا،فیصل واوڈا کو آرٹیکل 62ون ایف کےتحت نااہل قرار دیا گیا، وہ صادق اور امین نہیں رہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں