The news is by your side.

Advertisement

نیشنل ایکشن پلان پرعمل نہ ہونے سے مشکلات بڑھی ہیں، عمران خان

کوئٹہ : عمران خان نے کہا ہے کہ نیشنل ایکشن پلان پر عمل درآمد نہ ہونے کی وجہ سے مشکلات میں بڑھیں ہیں، الیکشن ملتوی ہوئے تو دہشت گرد کامیاب ہوجائیں گے۔

ان خیالات کا اظہار پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے سراج رئیسانی کے اہل خانہ اور مستونگ دھماکے میں شہید ہونے والے دیگر افراد کے لواحقین اور زخمیوں سے ملاقات کے بعد پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ سانحہ مستونگ پر پورا پاکستان افسردہ ہے، اے پی ایس حملے کے بعد اس واقعے میں سب سے زیادہ نقصان ہوا۔

عمران خان کا کہنا تھا کہ سراج رئیسانی بلوچستان عوامی پارٹی کا قیمتی اثاثہ تھے، یہاں آکر پتہ چلا مستونگ دھماکے میں 200 سے زائد افراد جان سے گئے، جو دہشت گردی ہو رہی ہے اس کا مقصد الیکشن کو متاثر کرنا ہے، دہشت گرد عوام کو خوفزدہ کرنا چاہتے ہیں، ہم نہیں ڈریں گے۔

چیئرمین پاکستان تحریک انصاف کا کہنا ہے کہ دہشت گردی میں اندرونی و بیرونی دونوں عناصر ملوث ہیں، 25 جولائی کے الیکشن بہت اہم ہیں، اس لئے یہ سب ہورہا ہے، تمام پاکستانیوں کو اکٹھا ہونا ہوگا، صوبائی حکومتوں کو متحد ہونا ہوگا۔

عمران خان نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا ہے کہ الیکشن ملتوی ہوئے تو دہشت گرد کامیاب ہوجائیں گے، دہشت گردی پرکافی حد تک قابو پاچکے ہیں، لیکن نیشنل ایکشن پلان پرعمل نہ ہونے سے مشکلات بڑھی ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ 25 جولائی کا الیکشن پاکستان کی تاریخ کا اہم ترین الیکشن ہے، کرپشن نے ادارے تباہ اور ملک کو مقروض اور دیوالیہ کردیا ہے، کرپشن اہم مسئلہ ہے اس کی ہی وجہ سے روپے کی قدرگررہی ہے۔

پی ٹی آئی چیئرمین عمران خان نے کہا ہے کہ میں نے2013 انتخابات میں کہا تھا کہ الیکشن میں دھاندلی ہوئی، کرپٹ لوگوں کے ساتھ ملک کر کیسے حکومت بنا سکتے ہیں؟ جن پر منی لانڈرنگ کے کیس ہیں ان کے ساتھ حکومت نہیں بنا سکتے۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں‘ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کےلیے سوشل میڈیا پرشیئر کریں

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں