The news is by your side.

Advertisement

نور مقدم قتل کیس : مجرم کی سزا کیخلاف اپیل دائر

اسلام آباد : نور مقدم کیس کے مجرم نے سزا کو کالعدم قرار دینے کیلئے عدالت سے رجوع کرلیا اور کہا کیس میں ملوث ہونے کا کوئی ٹھوس ثبوت نہیں ہے۔

تفصیلات کے مطابق نور مقدم کیس کے مجرم جان محمد نے اسلام آباد ہائی کورٹ میں اپیل دائر کردی ، جس میں 10سال کی سزا کالعدم قرار دینے کی استدعا کی گئی ہے۔

اپیل میں کہا گیا کہ مجھے قتل کی ایف آئی آر میں بطور ملزم نامزد نہیں کیا گیا تھا لیکن بعد میں ضمنی بیان میں ان کا نام شامل کیا گیا،میں پی ایم سیکرٹریٹ کا ملازم ہوں اور ظاہر جعفر کے گھر پر پارٹ ٹائم باغبانی کا کام کرتا ہوں۔

درخواست گزار کا کہنا تھا کہ اس کیس میں ملوث ہونے کا کوئی ٹھوس ثبوت نہیں ہے، عدالت سے استدعا ہے کہ اس کی سزا کو کالعدم قرار دیا جائے۔

یاد رہے اسلام آباد کی ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن عدالت کے جج عطا ربانی نے نور مقدم قتل کیس کا فیصلہ سناتے ہوئے مرکزی ملزم ظاہر جعفر کو سزائے موت سنائی تھی۔

عدالت نے کیس کے شریک ملزمان جان محمد اور افتخار کو 10، 10 سال قید کی سزا سنائی تھی ، سزا پانے والا مجرم افتخار چوکیدار اور مجرم جان محمد مالی تھے۔

عدالت نے تھراپی ورکس کے ملزمان سمیت ظاہرجعفر کے والدین کو اعانت جرم کے الزام سے بھی بری کردیا تھا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں