The news is by your side.

Advertisement

نور مقدم کو قتل کرنے سے متعلق ملزم ظاہرجعفر کا ایک اور بڑا انکشاف

اسلام آباد : نورمقدم قتل کیس میں پولیس کے پہلے چالان میں مرکزی ملزم ظاہرجعفر نے  انکشاف کیا کہ نورمقدم کو شادی سےانکار پر گھرمیں قید کرکے قتل کیا جبکہ ڈی این اے رپورٹ سے نور مقدم کا ریپ بھی ثابت ہوگئی۔

تفصیلات کے مطابق نورمقدم قتل کیس میں پولیس کی جانب سے پہلاچالان عدالت میں پیش کردیا گیا ، پہلےچالان میں مرکزی ملزم ظاہرجعفرنےنورمقدم کوقتل کرنےکااعتراف کرلیا جبکہ ڈی این اے رپورٹ سے نور مقدم کا ریپ بھی ثابت ہوگئی۔

ظاہر جعفر کا پولیس کو ریکارڈ کرایا گیا اعترافی بیان بھی چالان کاحصہ بنایا گیا ہے، چالان میں کہا گیا کہ ظاہرجعفر نےانکشاف کیانورمقدم نےشادی سےانکارکیاتواسےگھرمیں قیدکرلیا اور چوکیدارکوکہاگھرکےاندرناکسی کوآنےدیں نا نور مقدم کو جانےدیں۔

چالان کے مطابق ملزم ظاہرجعفرنےنورمقدم کوقتل کرکےاس کاسردھڑسےالگ کیا اور نور کاموبائل دوسرےکمرےمیں چھپادیا، جس کے بعد ملزم کی نشاندہی پر ہی نورمقدم کاموبائل اسی کے گھرکی الماری سے برآمد کیا۔

عبوری چالان میں کہا ہے کہ ملزم کےمطابق والدکوقتل کی اطلاع دی توانہوں نےکہاگھبرانےکی ضرورت نہیں، والد نے کہا بندےآرہےہیں جولاش ٹھکانےلگاکراسے وہاں سےنکال لیں گے تاہم اگرذاکرجعفربروقت پولیس کواطلاع دیتاتونورمقدم کاقتل بچ سکتاتھا ، والدنےاس وقوعہ میں اپنےبیٹےکی مددکی ہے۔

پولیس نے بتایا کہ ملزم کےمطابق تھراپی ورکس کےامجدمحمودکےساتھ غلط فہمی میں جھگڑاہوا، تھراپی ورکس ملازمین نے فعل کوچھپانے،شہادت ضائع کرنےکی کوشش کی جبلکہ تھراپی ورک کے زخمی ملازم امجدنے وقوعہ کااندراج بھی نہیں کرایا ، ملازم نے میڈیکل سلپ میں روڈایکسیڈنٹ درج کرایا۔

عبوری چالان کے مطابق ڈی وی آرمیں محفوظ شدہ تصاویراورفنگرپرنٹس بھی ملزم کےہی ہیں، ڈی این اےرپورٹ کےمطابق ملزم کامقتولہ سےریپ کرناثابت ہے، نورمقدم بھاگتی ہوئی گیٹ پرآئی توچوکیدارنےاسےسہولت نہیں دی، مالی نےبھی گیٹ نہیں کھولنےدیا،کھولنےدیتاتونورمقدم باہرجا سکتی تھی۔

چالان میں کہا گیا کہ ملزم نے 19جولائی کوامریکاکی فلائٹ بک کراکھی تھی لیکن سفرنہیں کیا ،رپورٹس میں آیاہےمقتولہ میں زہریانشہ کےاثرات نہیں پائےگئے ، 12ملزمان کیخلاف شہادت و ثبوت موجود ہیں انکی حد تک چالان جمع کرایاگیا۔

پولیس کا کہنا ہے کہ سائبرکرائم ونگ سے لیپ ٹاپ اور فون کی رپورٹ آنےپرضمنی چالان داخل ہو گا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں